بھارت کشمیریوں کو جبر وا ستبداد کے ذریعے حق خودارادیت کی جدوجہد سے ہرگز دستبردار نہیں کرسکتا،حریت کانفرنس

بھارت کشمیریوں کو جبر وا ستبداد کے ذریعے حق خودارادیت کی جدوجہد سے ہرگز ...

سرینگر (این این آئی) مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس نے حریت راہنما اور جموں وکشمیر مسلم ڈیموکریٹک لیگ کے سربراہ حکیم عبدالرشید کی گرفتاری ، حریت ترجمان اعلیٰ غلام احمد گلزار کی بار بار نظربندی ،حریت راہنما محمد اشرف لایا کی گھر میں مسلسل نظر بندی اور لوگو ں کی جامع مسجد سرینگر میں مسلسل پانچویں جمعہ کو نماز ادا نہ کرنے دینے کے کٹھ پتلی انتظامیہ کے ناروا اقدامات کی شدید مذمت کی ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ کشمیر ی عوام 27؍اکتوبر 1947ء سے بھارتی مظالم کا شکار ہیں اور قتل و غارت گرفتاریاں، دینی فرائض کی ادائیگی پر پابندیاں، ماردھاڑ اور اظہار رائے کی آزادی کے حق پر پابندی یہاں کا معمول ہے۔انہوں نے واضح کیا کہ ان حربوں سے کشمیریوں کو اپنے پیدائشی حق، حق خود ارادیت کی جد وجہد سے ہرگز دستبردار نہیں کیا جاسکتا۔ ترجمان نے جموں خطے کی کٹھوعہ جیل میں کشمیری نظر بندوں کے ساتھ روا رکھے جانے والے ظالمانہ سلوک کی بھی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نظر بندوں کو24گھنٹوں میں صرف ایک گھنٹے کے لیے لاک اپ سے باہر نکالا جاتا ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ کشمیری بھارت کے تمام تر جبر و استبداد کے باوجود حق خود ارادیت کے حصول کی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں اور انہیں ایک روز ضرور اپنے مقصد میں کامیابی حاصل ہو گی۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...