شمالی کوریا دھمکیاں دینا بند کرے: امریکی آرمی چیف

شمالی کوریا دھمکیاں دینا بند کرے: امریکی آرمی چیف

واشنگٹن (این این آئی)امریکہ کی مسلح فوج کے سربراہ جیمز میٹس نے شمالی کوریا کو خبردار کیا ہے کہ پیانگ یانگ جوہری ہتھیاروں کے ذریعے ہمیں تباہ کرنے کی دھمکیاں دینا بند کرے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی جنرل جیمز میٹس نے جنوبی کوریا کے وزیر دفاع سانگ یانگ مو کے ہمراہ شمالی کوریا کی سرحد سے کچھ فاصلے پر واقع غیر مسلح زون کا دورہ کیا۔اس موقع پر جنرل جیمز میٹس نے شمالی کوریا کے سربراہ کم جانگ اْن کی حکومت کو جارحانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ پنانگ یانگ اپنے لوگوں کے ساتھ برا برتاؤ کرتا ہے۔انہوں نے کہا کہ شمالی کوریا کے ہمسائے میں جنوبی کوریا واقع ہے جس نے اپنے لوگوں کیلئے جمہوریت کو ترجیح دی ہے۔جیمز میٹس نے کہا کہ ہمارا مقصد جنگ نہیں بلکہ جزیرہ نما کوریا کو مکمل اور ناقابل واپسی غیرنیوکلیئر خطہ بنانا ہے۔دوسری جانب جنوبی کوریا کے وزیر دفاع نے کہا کہ شمالی کوریا کبھی بھی اپنے جوہری ہتھیار استعمال نہیں کر سکتا اور اگر اس سے ایسا کیا تو اسے جنوبی کوریا اور امریکہ کی مشترکہ طاقتور فورس کی جانب سے منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔یاد رہے کہ جزیرہ نما کوریا میں 1950 سے 1953 تک ہونے والی جنگ کے بعد سے جنوبی کوریا میں تقریبا 30 ہزار امریکی فوجی تعینات ہیں۔سانگ یانگ مو کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کو مسئلے کے حل کے لئے ہر صورت مذاکرات کرنا ہوں گے۔یاد رہے کہ کچھ ماہ قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے شمالی کوریا کو خبردار کیا گیا تھا کہ اگر پیانگ یانگ نے امریکہ یا اس کے اتحادیوں کو دھمکایا تو شمالی کوریا کو مکمل طور پر تباہ کردیں گے۔دوسری جانب شمالی کوریا کے رہنما نے بھی امریکی صدر کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ ہم ایک ایٹمی قوت ہیں اور پورا امریکہ ہمارے نشانے پر ہے، جب چاہیں امریکہ کو تباہ کر سکتے ہیں۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...