لاپتہ افراد کی بازیابی ، گورنر ہاؤس کراچی کے سامنے شیعہ ایکشن کمیٹی کا احتجاجی دھرنا ، خواتین اور بچوں کی کثیر تعداد شریک

لاپتہ افراد کی بازیابی ، گورنر ہاؤس کراچی کے سامنے شیعہ ایکشن کمیٹی کا ...

 کراچی (آن لائن) شیعہ تنظیموں کی نمائندہ ایکشن کمیٹی کی جانب سے لاپتہ افرادکی بازیابی کیلئے جیل بھروتحریک کے بعداحتجاجی دھر نے کی مہم شروع کردی گئی ہے ، شیعہ ایکشن کمیٹی کی جانب سے ہفتہ کی صبح گورنرہاؤس پردھرنادیا گیاجس میں مردوں کے علاوہ خواتین او ر بچے بھی شامل تھے ۔صبح سویرے مختلف تنظیموں کی جانب سے دھرنے کے شرکاء کوناشتہ بھی کرادیاگیا۔احتجاج کاسلسلہ جمعہ اورہفتہ کی در میا نی شب سے شروع کیاگیاتھا۔احتجاجی ریلی میں شریک افرادشارع فیصل سے ہوتے ہوئے گورنرہاؤس پہنچے جہاں احتجاجی دھرنادیا گیا۔ اس موقع پرسکیوورٹی کے بھی بہت سخت انتظامات کئے گئے تھے ،پولیس اوررینجرزکی بھاری نفری تعینات تھی جبکہ کسی بھی ممکنہ خراب صورتحال سے نمٹنے کیلئے واٹرکینن کوبھی طلب کرلیاگیا تھا ۔دھرنے کے باعث کبوترچوک ،آرٹس کونسل چوک،شاہین کمپلیکس اوراطراف کے علا قو ں میں ٹریفک کی روانی بری طرح متاثرہوئی ۔مظاہرین کاکہناتھا حکومت نے جبری طورپرہمارے کئی افرادکولاپتہ کیاہواہے اگروہ کسی جرم میں ملوث ہیں تو عدالت میں پیش کیاجائے ،علامہ حسن ظفرنقوی کاکہناتھا ہماری احتجاجی تحریک پر امن ہے اور لاپتہ افرادکی بازیابی تک دھر نا جا ر ی رہے گا۔آخری اطلاعات آنے تک کسی بھی حکومتی وفدنے مذاکرات کیلئے شیعہ رہنماؤں سے رابطہ نہیں کیاتھا ۔

شیعہ ایکشن دھرنا

مزید : علاقائی