امیر مقام اپنے صوبے کا استحصال کر رہا ہے ،سیاسی جماعتیں تحریک انصاف کے جنون کا مقابلہ نہیں کر سکتیں:پرویز خٹک

امیر مقام اپنے صوبے کا استحصال کر رہا ہے ،سیاسی جماعتیں تحریک انصاف کے جنون ...

نوشہرہ ( بیورورپورٹ)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے مشترکہ اُمیدوار کی تحریک انصاف کے ہاتھوں شکست فاش ن لیگیوں کیلئے عبرت ہے۔2018 دور نہیں ،مسلم لیگ (ن )کے کرتوتوں پر عوام اُن کا صفایا کرنے کیلئے تیار ہیں ۔امیر مقام کا مجھ پر اور وزیراعلیٰ ہاؤس میں فہرستیں بنانے کا تاثر حقیقت کے خلاف اور امیر مقام کی گھڑی ہوئی ن لیگ کی ہار کی داستان ہے۔امیر مقام نے ہوائی نقشہ کشی کی ہے کیونکہ اس کے سیاسی راستے بند ہو تے جارہے ہیں۔جس طرح کا ٹھیکیدار ہے اُسی طرح کی سیاست بھی کرتا ہے۔وفاق سے ٹھیکے لے کر اپنے صوبے کے عوام کا استحصال کر رہا ہے۔جب صوبے کے عوام نے ہی ن لیگ کو نمائندگی نہیں دی تو وہ اپنی ناکامیاں چھپانے کیلئے الزام تراشی کررہا ہے۔ الیکشن کمیشن آزاد ہے ، ایک آزاد پولیس فورس اُس کی مد د کیلئے موجود تھی اور فوج کی خدمات بھی میسر تھیں۔ جب عوام کی نظروں میں اُنکی ساکھ ہی ختم ہو گئی ہے تو عوام کی رائے کی توہین کرنا چھوڑ دیں۔ اُسے عوام کی رائے کا احترام سیکھنا ہو گا۔ یہ نیا خیبرپختونخوا اور نیا پاکستان ہے ۔ امیر مقام کی سیاست ہوا میں شروع ہوتی ہے اور ہوا میں ختم ہوتی ہے۔مسلم لیگ (ن) ویسے بھی آخری سانسیں لے رہی ہے۔دھاندلی کی پیداوار کی زبان سے دھاندلی کا واویلا ناقابل فہم ہے۔عوام سمجھ چکے ہیں کہ ن لیگ پاکستانی سیاست میں غیر متعلق اور بوجھ بن چکی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ویلج کونسل بالو (تاروجبہ) ضلع نوشہرہ میں شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ایم این اے ڈاکٹر عمران خٹک ،ایم پی اے میاں خلیق الرحمن اور نائب ناظم اشفاق خٹک نے بھی جلسے سے خطاب کیا جبکہ دیگر مقامی منتخب نمائندوں اور سیاسی و سماجی شخصیات نے بھی جلسے میں شرکت کی۔ اس موقع پر کونسلر حاجی فضل دیان اور سماجی شخصیت سید زیب حسین شاہ سمیت نواز خان، بشیر کاکا، خوشدل خان ، غلام نبی ، صمیم جان، اسماعیل خان، رفیق خان، خادم حسین، خالد حسین، واجد شہزاد، نورگل، علی اصغر، طارق حسین، عابد حسین ، نوید خان، ناصر محمود ، شکیل احمد، اسد خان، علی حسن، ملک کامران، نوید، توحید، منصور ، خالد ، گوہر، سجاول اور امجد نے پاکستان پیپلز پارٹی سے مستعفی ہو کر تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔ پرویز خٹک نے کہاہے کہ امیر مقام کا ہر چیلنج مجھے قبو ل ہے اور اس کے پاس اگر دھاندلی کے ثبوت موجود ہیں تو سامنے لائے۔مسلم لیگ (ن )،پی پی پی اور اے این پی تحریک انصاف کے جنون کا مقابلہ نہیں کرسکتیں۔پرویز خٹک نے کہا کہ امیر مقام کو این اے چار میں پھینکے گئے سوئی گیس کے پائپ اور بجلی کے ٹرانسفراٹھانے نہیں دیں گے۔پوری میڈیا مبصرین نے کاروائی کی خود نگرانی کی۔نا اہل وزیر اعظم کی کرپشن کی وجہ سے دُنیا بھر میں قوم کا سر شرم سے جھک گیا ۔جس قوم کا لیڈر خود کرپٹ ہو اُس پر دُنیا کا اعتماد اُٹھ جاتا ہے ۔ صوبے کی تاریخ ہے کہ یہاں کسی سیاسی جماعت نے دوبارہ حکومت نہیں بنائی مگر ہم اس تاریخ کو بدل دیں گے ۔ تحریک انصاف میں 60 فیصد نوجوان ہیں اور نوجوانوں کا مقابلہ کوئی نہیں کر سکتا ۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ صوبائی حکومت بہترین اور معیاری ترقیاتی کام بھی کررہی ہے اور صوبہ بھر میں ترقیاتی سکیمیں جاری ہیں مگر ہمارا فوکس نظام کی اصلاح پر رہا ہے کیونکہ ماضی میں کسی نے بھی غریب کو درپیش مسائل کی فکر نہیں کی ہم ایک ایسے نظام کیلئے کوشاں ہیں جہاں غریب کو تعلیم اور صحت کے معیاری مواقع میسر ہوں ۔ حقدار کو حق ملے اور عام آدمی کی زندگی کو مثبت تبدیلی سے ہمکنار کر سکیں۔ ہماری حکومت نے صوبے کی تاریخ میں پہلی بار تباہ شدہ تعلیمی اور صحت کے اداروں میں عملہ پورا کیا ۔پولیس کو سیاسی غلامی سے نجات دلا کر ایک با اختیار فور س کی شکل دی اور اس کو دیر پا بنانے کیلئے باقاعدہ طور پر قانون سازی کی گئی ۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ ہم نے صوبے میں جس سسٹم کی بنیاد رکھ دی ہے اگر یہ جاری رہے تو خیبرپختونخوا دُنیا کا بہترین صوبہ اور ترقی یافتہ پاکستان کی بنیاد بن سکتا ہے۔ہم کسی سے کم نہیں ہیں ہمیں صرف ایماندار قیادت اور شفاف نظام کی ضرورت ہے جو تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی صورت میں موجود ہے اورعمران خان ہی اس ملک کے وزیر اعظم ہوں گے۔وزیراعلیٰ نے عوام سے کہاکہ وہ اپنے بچوں اور قوم کے مستقبل کیلئے نظام کی اصلاح کیلئے اُٹھائے گئے اقدامات کو کامیاب بنانے میں اپنا کردار ادا کریں ۔عوام کے پاس بڑی طاقت ہے اور اس کا مستقبل اپنے ہاتھوں میں ہے ۔عوام غلط کا ساتھ نہ دیں اور اگر کہیں غلط کام ہوتا دیکھیں تو آگاہ کریں۔عوام کے تعاون کے بغیر خوشحالی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا۔

پرویز خٹک

مزید : کراچی صفحہ اول