ڈاکٹرکی غفلت کیوجہ سے14 ماہ کا بچہ ریڑی رگڑتا ہواجان بحق انکوائری مقرر

باجوڑ ایجنسی ( نمائندہ پاکستان) ایجنسی ہیڈکوار ٹرہسپتال خارمیں ڈاکٹرکی غفلت کی وجہ سے ایک معصوم بچہ زندگی کی بازی ہارگیا۔تفصیلات کے مطابق عبداللہ سکنہ بتائی علیزئی نے میڈیا کوبتایاکہ میرے بیٹے بلاول(عمر14ماہ)کوپیٹ میں درد کی شکایت شروع ہوئی جس پربچے کوایجنسی ہیڈکوارٹرہسپتال لایا گیاجہاں پرڈاکٹرعلی محمدنے اپریشن کا کہا اور26اکتوبر کوصبح بچے کا اپریشن کیاگیالیکن بچے کی تکلیف میں کمی کی بجائے اضافہ ہوتا گیامیرے پوچھنے پربتایاگیاکہ شام کوڈاکٹر معائنہ کیلئے آئے گالیکن کوئی نہیں آیا26اور27اکتوبر کے درمیانی رات بچہ تمام رات زندگی کیلئے لڑتارہا میرے باربار مطالبے پر رات کوپیرامیڈک آیا اوربچے کومدہوش کرنے والی داوئی دے دی گئی اگلے صبح10بجے جب ڈاکٹر ایا اور بچے کا معائنہ کیا توبچہ قریب المرگ تھا اور وقت ہاتھ سے نکل چکا تھا عبداللہ نے محکمہ صحت اورپولیٹیکل انتظامیہ سے واقعہ کی تفتیش اورمجرموں کوسخت سزادینے کا مطالبہ کیا دوسری طرف جب خار ہسپتال کے ڈی ایم ایس ڈاکٹر نصیب گل سے واقعے کا کہا گیا تو اُنہوں نے بچے کے ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ واقعے کی تحقیق شروع کر دی گئی ہے اور چونکہ یہ سرجیکل کا معاملہ ہے اس لئے ہم نے سرجن ڈاکٹر ضیاء الرحمان اور سرجیکل ماہرین کی نگرانی میں ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جو یہ تحقیق کرے گا کہ بچے کی موت کن وجوہات پر ہوئی ہے غفلت کے مرتکب افراد کے خلاف تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائیگی اور وہ رپورٹ ہفتے کے اندر اندر میڈیا کو دکھایا جائے گا انہوں نے کہا کہ بچے کے لواحقین کو بھی درخواست جمع کرنے کا کہا گیا ہے

 

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...