سی پیک سے یورپی ممالک سے تجارت کو فروغ ملے گا،خالد اعوان

سی پیک سے یورپی ممالک سے تجارت کو فروغ ملے گا،خالد اعوان

کراچی (اسٹاف رپورٹر) ٹی سی ایس ہولڈنگز (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے چیئرمین ، خالد اعوان نے کہا ہے کہ CPEC منصوبے کی تکمیل کے ساتھ ہی آنے والے برسوں میں پاکستان میں سرمایہ کاری کی سطح بے مثال حد تک بلند ہوجائے گی،اب یہ ملک کے لئے ایک چیلنج ہے کہ وہ اس موقع سے پوری طرح فائدہ اٹھائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایک سیمینار میں کیا جس میں وہ ایک نمایاں مقرر کے طور پر خطاب کررہے تھے، یہ سیمینار PITF 2017ء کا ایک حصہ تھا جس کا عنوان تھا ’’چین پاکستان اقتصادی راہداری (CPEC) ۔ اقتصادی تبدیلی کا موقع۔‘‘ انہوں نے کہا کہ ہمیں اس موقع پر ایک ذمہ دارنہ طرزِ عمل کا مظاہرہ کرنا چاہئے ، اور اسے انفراسٹرکچر کے دیگر منصوبوں سے منسلک کرنا چاہئے تاکہ ملک میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری آسکے ،انہوں نے مزید کہا :’’ جیسا کہ آپ سب کو معلوم ہے کہ CPEC ایک بڑے منصوبے کا نام ہے ، اور اس سنگِ میل کو عبور کرنے کے بعد ہم نہ صرف مشرقِ وسطیٰ سے تجارت کو فروغ دینے کے قابل ہوں گے بلکہ یورپی ممالک سے بھی تجارت میں اضافہ ممکن ہے۔‘‘ وزیر داخلہ ، احسن اقبال؛ FPCCI کے نائب صدر، مرزا اختیار بیگ؛ CPEC کے کوآرڈینیٹر ، حسن داؤد حسین اور دیگر نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسی طرح کے خیالات کو شیئر کیا اور CPEC سے متعلق ترقیاتی منصوبوں کے مختلف پہلوؤں پر روشنی ڈالی۔پاکستان کا معروف ایکسپریس اور لاجسٹکس کی سروسز فراہم کرنے والا ادارہ، ٹی سی ایس،ایکسپو سینٹر کراچی میں منعقد ہونے والے پاکستان انٹر نیشنل ٹریڈ فیئر (PITF) کا گولڈ اسپانسر تھا۔ٹی سی ایس نے اس تقریب میں ایک اسٹال بھی لگایا، جس نے شرکاء کی توجہ اپنی جانب مبذول کرائے رکھی۔دیگر شرکاء کے علاوہ، وفاقی وزیرِ داخلہ، احسن اقبال نے بھی ٹی سی ایس اسٹال کا دورہ کیا۔ ٹی سی ایس کے چیئرمین خالد اعوان نے بھی اپنی ٹیم کے ساتھ اسٹال کا دورہ کیا اور ٹیم کی کوششوں کی تعریف کی۔ یہ تقریب پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (FPCCI) نے Bader ایکسپو سلوشن کی شراکت میں منعقد کی۔PITF ملک کا سب سے بڑا ٹریڈ اینڈ کنزیومر فیئر ہے جس کا مقصد خاص طور پر چین سے کاروباری نیٹ ورکنگ اور شراکت داری میں اضافہ ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر