سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کو منطقی انجام تک پہنچنا چاہئے ،رؤف صدیقی

سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کو منطقی انجام تک پہنچنا چاہئے ،رؤف صدیقی

کراچی (اسٹاف رپورٹر)ایم کیو ایم کے رہنما رؤف صدیقی نے کہا ہے کہ سانحہ بلدیہ فیکٹری کے مقدمے کو منطقی انجام تک پہنچنا چاہئے اور جو افراد ملوث ہوں انہیں سر عام پھانسی ہونی چاہئے۔ انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت میں پیشی کے موقع پر ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما رؤف صدیقی نے کہا کہ سانحہ بلدیہ فیکٹری کے مقدمے سے میرا نام بطور ملزم عدالت نے نکال دیا ہے۔حماد صدیقی کی گرفتاری کی خبر آئی ہے۔ اور واضح کہنا چاہتا ہوں کہہ کسی کے ساتھ ناانصافی نہیں ہونی چاہئے۔ رؤف صدیقی نے کہا کہ جس نے مقدمے کو خراب کرنے کی کوشش کی وہ براہ راست جہنم میں جائیگا۔ رؤف صدیقی سے پوچھا گیا کہ اگر ادارے سانحے بلدیہ فیکٹری کیس میں ایم کیو ایم سے تعاون مانگتے ہیں تو کس حد تک کریں گے؟ جس کا جواب دیتے ہوئے رؤف صدیقی نے کہا کہ میں نے ایم کیو ایم کا نام نہیں لیا۔ اگر عدالت کسی کو بھی گواہی کے لیئے بلاتی ہے تو اسے جانا چاہئے۔ جو اس میں رتی برابر بھی ملوث ہے اسے سزائے موت دینی چاہئے۔ رؤف صدیقی نے کہا کہ اس معاملے کو منطقی انجام تک پہنچنا چاہئے ملوث افراد کو سرعام پھانسی دینی چاہئے۔ عدل کے تقاضے پورے ہونے چاہئے میں سمجھتا ہوں اس میں بچے گا کوئی نہیں۔ 250 سے زائد شہدا کے لہو کا معاملہ ہے انصاف ہونا چاہئے۔

 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...