شادی کے بعد سارا دن گھر پر پڑا رہنے والا نوجوان ایک دن جذباتی ہوگیا، بیگم سے 50 ہزار روپے اُدھار لے کر ایسا کام شروع کیا کہ دنوں میں ہی کروڑ پتی بن گیا، کیا کام تھا؟ جان کر آپ داد دیں گے

شادی کے بعد سارا دن گھر پر پڑا رہنے والا نوجوان ایک دن جذباتی ہوگیا، بیگم سے 50 ...
شادی کے بعد سارا دن گھر پر پڑا رہنے والا نوجوان ایک دن جذباتی ہوگیا، بیگم سے 50 ہزار روپے اُدھار لے کر ایسا کام شروع کیا کہ دنوں میں ہی کروڑ پتی بن گیا، کیا کام تھا؟ جان کر آپ داد دیں گے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک نوجوان شادی کے بعد بے روزگاری کے باعث سارا دن گھر پر ہی پڑا رہتا تھا۔ ایک دن وہ جذباتی ہو گیا اور اپنی بیگم سے 50ہزار روپے ادھار لے کر ایسا کام شروع کر دیا کہ دنوں میں کروڑ پتی بن گیا۔ ویب سائٹ kenfolios.comکی رپورٹ کے مطابق اس نوجوان کا نام نیرج گپتا ہے جو ممبئی کا رہنے والا ہے۔ اس نے بے روزگاری سے تنگ آ کر بیوی سے قرض لیا اور ممبئی کے علاقے اندھیری میں ایک گیراج کھول لیا۔ گیراج سے جب اسے کافی آمدنی ہونے لگی تو اس نے ممبئی میں لوگوں کو آٹوموٹیو سروسز فراہم کرنی شروع کر دیں اور پھر اس نے اپنی ٹیکسی سروس ’میرو کیبز (Meru Cabs)کی بنیاد رکھ دی۔

وہ آدمی جس نے چند گھنٹوں میں ہی 1000 ارب روپے کمالئے، پوری دنیا کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئیں

اب میرو کیبزممبئی کی سب سے بڑی ٹیکسی سروس ہے۔ لوگ فون کال، ویب سائٹ، گوگل میپس اور فیس بک وغیرہ کی ایپلی کیشنز کے ذریعے میرو کی ٹیکسی منگوا سکتے ہیں اور سفر کر سکتے ہیں۔رپورٹ کے مطابق چند گاڑیوں سے شروع ہونے والی میرو کیبز کے ملازمین کی تعداد ہزاروں میں اور اس کے اثاثے کروڑوں میں پہنچ چکے ہیں۔نیرج کا کہنا تھا کہ ”میری بیوی جیٹ ایئرویز میں نوکری کرتی ہے۔ شادی کے بعد میں بے روزگار تھا اور میرا کام صرف یہ رہ گیا تھا کہ اپنی بیوی کوروزانہ ایئرپورٹ چھوڑ آﺅں اور واپس گھ رلے آﺅں۔ 5سال تک میرے یہی معمول رہا۔ میں اس زندگی سے تنگ آ گیا تھا چنانچہ میں نے بیوی سے قرض لے کر گیراج کھولا اور اس کے بعد پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔آج میری کمپنی ’میرو کیبز‘ کی ٹیکسیوں کی تعداد 9ہزار ہو چکی ہے جو روزانہ 30ہزار سے زائد ٹرپ لگا رہی ہیں۔ اب میرا کاروبار ممبئی سے نکل کر بھارت کے دیگر پانچ شہروں تک پھیل چکا ہے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس