بغداد میں آپریشن کے دوران سیکیورٹی فورسز کو ایسی چیز دریافت مل گئی کہ جسے دیکھتے ہی اہلکاروں کے پاؤں تلے زمین نکل گئی

بغداد(آن لائن)عراق کی مشترکہ آپریشنز کمان نے ضلع الحویجہ میں اجتماعی قبر دریافت کی ہے جس میں سے فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی 50 لاشیں برآمد ہوئی ہیں ۔

میانمار میں ترک صحافیوں نے ایسی چیز اڑا دی کہ پولیس کی دوڑیں لگ گئیں ،گرفتار کرکے جیل میں ڈال دیا
غیر ملکی میڈیا کے مطابق مشترکہ آپریشنز کمان کا کہناتھا کہ داعش کے جنگجوؤں نے الحویجہ کے وسط میں واقع گاؤں البکارہ میں دہشت گردی کے حملوں میں سرکاری فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کو ہلاک کردیا تھا،اجتماعی قبر اور اس سے برآمد ہونے والی باقیات کی تحقیقات و تجزیے کے لیے قانونی طریق کار اختیار کیا جائے گا۔اکتوبر کے اوائل میں فوج کے ذرائع نے بتایا تھا کہ سکیورٹی فورسز نے الحویجہ کے جنوب مشرق میں واقع گاؤں ابو صخرہ سے 2 اجتماعی قبریں دریافت کی تھیں اور ان سے فوج اور پولیس کے دسیوں اہلکاروں کی باقیات برآمد کی گئی تھیں۔انھیں بھی مسلح جنگجوؤں نے ہلاک کرکے اجتماعی قبروں میں دفنا دیا تھا۔کرکوک کے پولیس کپتان حامد العبیدی نے ترکی کی خبررساں ایجنسی انا طولیہ کو بتایا ہے کہ الحویجہ میں فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی اجتماعی قبروں کی تلاش کے لیے سکیورٹی فورسز کی ٹیمیں مقرر کردی گئی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ 2014 کے بعد سے دسیوں فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کا کچھ اتا پتا نہیں ہے۔
واضح رہے کہ جون 2014میں داعش اور اس کے اتحادی مسلح جنگجوؤں نے عراق کے شمالی شہر موصل سمیت بہت سے شمال مغربی شہروں اور علاقوں پر قبضہ کر لیا تھا۔ انھوں نے اپنی یلغار کے وقت سیکڑوں عراقی فوجیوں اور پولیس اہلکارو ں کو اغوا کر لیا تھا۔ پھر ان میں سے دسیوں کو بے دردی سے قتل کرکے لاشیں دریا میں بہا دی تھیں یا پھر اجتماعی قبروں میں دفن کردی تھیں۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...