صومالیہ میں دھماکوں کے نتیجے میں23افراد کی ہلاکت، خفیہ ادارے کے سربراہ اور پولیس چیف کو برطرف کردیا گیا

صومالیہ میں دھماکوں کے نتیجے میں23افراد کی ہلاکت، خفیہ ادارے کے سربراہ اور ...
صومالیہ میں دھماکوں کے نتیجے میں23افراد کی ہلاکت، خفیہ ادارے کے سربراہ اور پولیس چیف کو برطرف کردیا گیا

  

موغادیشو(ڈیلی پاکستان آن لائن)صومالیہ کے دار الحکومت موغادیشو میں دو کار بم دھماکوں کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد 23ہوگئی ہے جبکہ حکومت نے صومالوی خفیہ ادارے کے سربراہ عبداللہ محمد اور پولیس چیف عابدی حاکم سعید کو برطرف کردیا ہے۔

خالدشہنشاہ بےنظیربھٹوقتل کیس کا گواہ تھا،عزیربلوچ نے پیپلزپارٹی قیادت کے کہنے پراسے قتل کیا: عمران خان

غیر ملکی خبررساں اداروں کے مطابق دونوں خود کش کار بم دھماکے موغا دیشومیں صدارتی محل کے قریب کیے گئے، پہلا دھماکا اس وقت ہوا جب ایک خودکش حملہ آور نے بارود سے لدی گاڑی صدارتی محل کے قریب واقع مقامی ہوٹل کے پاس دھماکا کیا تھا، جس کے ساتھ ہی مسلح جنگجووں نے اندھادھند فائرنگ شروع کردی، اس دھماکے میں10افراد کی ہلاکت اور درجنوں زخمی ہوئے ، جبکہ کچھ دیر بعد صدارتی محل کے قریب ایک اور کاربم دھماکا ہوگیا۔دھماکوں کے بعد مسلح جنگجووں نے اندھادھند فائرنگ بھی کی۔ ان دھماکوں میں کم از کم 23افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔یاد رہے کہ رواں مہینے کے نصف میں موغادیشو میں ہونے والے حملوں میں 340 شہری ہلاک اور 200سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

مزید : بین الاقوامی