قومی اسمبلی :سرکاری نجی شراکتی اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس اورکاروباری تعمیر نو کمپنیات ترمیمی آرڈیننس میں 120 دن کی توسیع کی قرارداد منظور 

قومی اسمبلی :سرکاری نجی شراکتی اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس اورکاروباری تعمیر نو ...
قومی اسمبلی :سرکاری نجی شراکتی اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس اورکاروباری تعمیر نو کمپنیات ترمیمی آرڈیننس میں 120 دن کی توسیع کی قرارداد منظور 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی اسمبلی میں سرکاری نجی شراکتی اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس اورکاروباری تعمیر نو کمپنیات ترمیمی آرڈیننس میں 120 دن کی توسیع کی قرارداد منظورکرلی گئی۔

ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا،دستور چھبیسویں ترمیم بل 2020 ایوان میں پیش کر دیا گیا،چین پاکستان اقتصادی راہداری اتھارٹی بل 2020 ایوان میں پیش کر دیا گیا،دونوں بلز مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے پیش کیے،بل کی کاپیاں نہ دینے پر اپوزیشن نے احتجاج کیا،ڈپٹی سپیکر نے دونوں بلز متعلقہ کمیٹیوں کو بھیج دیئے ۔

پیپلزپارٹی کی شگفتہ جمانی نے کورم کی نشاندہی کر دی،ڈپٹی سپیکرقاسم خان سوری نے اراکین کی گنتی کی ہدایت کی،اپوزیشن اراکین ایوان سے باہر چلے گئے،جماعت اسلامی کے رکن مولانا عبدالاکبر چترالی ایوان میں نشست پر موجودرہے۔

قومی اسمبلی اجلاس میں پبلک پروکیورمنٹ ریگولیٹری اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس میں 120 دن کی توسیع کی قرارداد منظورکرلی گئی،سرکاری نجی شراکتی اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس اورکاروباری تعمیر نو کمپنیات ترمیمی آرڈیننس میں 120 دن کی توسیع کی قرارداد منظورکرلی گئی،قرارداد مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے پیش کی۔مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے کہاکہ یہ آئین میں لکھا ہوا ہے کہ پارلیمنٹ آرڈیننس میں توسیع کرسکتی ہے،اگرآج آرڈیننس میں اضافہ نہ ہوا تو ان کی مدت ختم ہو جائے گی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -