کراچی، تین ماہ کے دوران 27 ہزار 500 سے زائد واردتیں 

  کراچی، تین ماہ کے دوران 27 ہزار 500 سے زائد واردتیں 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) رواں سال کے تین ماہ کے دوران وارداتوں میں خطرناک اضافہ ہوگیا، 27 ہزار 500 سے زائد شہری قیمتی اشیا سے محروم ہوگئے۔کراچی شہر میں اسٹریٹ کرائم میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے، قانون نافذ کرنے والے ادارے ان واردتوں کو  روکنے میں ناکام ہیں۔ رواں سال کے تین مہینے میں ریکارڈ توڑ وارداتیں ہوئیں۔رواں سال جولائی، اگست اور ستمبر میں 27 ہزار 500 سے زائد وارداتیں رپورٹ ہوئیں، جو تین ماہ کے دوران تقریبا 10 فیصد کا اضافہ ہے، 2020 کے پورے سال میں 25 ہزار وارداتیں ہوئیں تھیں۔ گزشتہ روز ہونے والی قائمہ کمیٹی بریفنگ میں ڈی آئی جی شرقی کا وارداتوں میں کمی کا دعوی کیا۔ذرائع کے مطابق سب سے زیادہ وارداتیں ضلع شرقی میں ہوتی ہیں۔ سال 2021 میں تقریبا 12 ہزار موٹرسائیکلیں چوری ہوئیں، جبکہ اس کا 2020 سے جائزہ لیا جائے تو 10 ہزار کے قریب شہریوں کو موٹر سائیکلوں سے محروم کیا گیا تھا۔تین ماہ کے دوران 13 ہزار سے زائد موبائل فون چوری اور چھینے گئے۔ متعدد وارداتیں تھانے میں درج ہی نہیں کی جاتیں ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -