بھارتی صحافی اپنے ہی ملک کے انتہا پسندوں کا شکار بن گیا

بھارتی صحافی اپنے ہی ملک کے انتہا پسندوں کا شکار بن گیا
 بھارتی صحافی اپنے ہی ملک کے انتہا پسندوں کا شکار بن گیا

  

 نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک )امریکہ  میں بھارتی صحافی اپنے ہی ملک کے انتہا پسندوں کا شکار بن گیا، نریندر مودی کے حامیوں نے سینئر صحافی اور ٹی وی اینکر راجدیپ سرڈیسائی کو سر راہ گھیر لیا اور منہ پر تھپڑ دے مارا۔بھارتی میڈیا کے مطابق گزشتہ روز نیویارک کے میڈیسن سکوائر گارڈن پربھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے اعزاز میں تقریب ہورہی تھی۔اس دوران ہجوم نے سرڈیسائی کو گھیر لیا اورایک شخص نے ان پر ہاتھ چلائے اور کھینچا تانی کی۔ رپورٹس کے مطابق سرڈیسائی کے منہ پر بھی ہاتھ لگا تاہم انٹرنیٹ پر آنے والی میڈیا میں یہ منظرنمایاں نہیں ہو سکا ۔ کچھ لوگوں نے بیچ بچاﺅ کرکے سرڈیسائی کو وہاں سے روانہ کیا۔ بعد میں سماجی ویب سائٹ پر پیغام میں بھارتی صحافی نے لکھا کہ میڈیس گارڈن میں عظیم لوگ تھے سوائے چند احمقوں کے جو اب بھی بدتمیزی سے اپنی منوانے پر یقین رکھتے ہیں۔ واقعہ پر سوشل میڈیا میں بحث چھڑ گئی ہے جس میں اس واقعہ کی وجہ راجدیپ سرڈیسائی کی مودی پر تنقید اس حرکت کا ذمہ دار مودی کے حامیوں کو ٹہرایا جارہاہے۔

مزید : بین الاقوامی