وہ مہلک غذائیں جو آپ شوق سے کھاتے ہیں

وہ مہلک غذائیں جو آپ شوق سے کھاتے ہیں
وہ مہلک غذائیں جو آپ شوق سے کھاتے ہیں

  

برمنگھم (نیوز ڈیسک) بازاری کھانوں کے متعلق یہ تو مشہور ہے کہ یہ صحت کیلئے اچھے نہیں لیکن یہ بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ ان میں انتہائی خطرناک اجزاءبھی شامل ہوتے ہیں۔ ہم جو روز مرہ خواک بازر سے خریدتے ہیں اس میں پائے جانے والی کچھ عام خطرناک اشیاءدرج ذیل ہیں۔

1۔ اکثر بازاری کھانوں، خصوصاً کپ کیک جیسی اشیاءمیں لکڑی کا گودا پایا جاتا ہے۔

2۔ سٹرابیری کے جوس یا کیک میں کیسٹوریم نامی مادہ شامل کیا جاتا ہے جو ایک جانوروں کی آنتوں سے حاصل کیا جاتا ہے۔

3۔فریزکئے گئے گوشت کو محفوظ رکھنے کیلئے اس میں خطرناک گیس کاربن مونو آکسائیڈ شامل کی جاتی ہے۔

4۔سکمڈ ملک میں ٹائٹینیم سلفیٹ نامی زہریلا مادہ پایا جاتا ہے۔

5۔بعض خشک میوہ جات اور گری دار میوہ جات پر جانوروں کی ہڈیوں سے حاصل ہونے والی جیلٹین کی تہہ چڑھائی جاتی ہے۔

6۔چینی کو سفید رنگ دینے کیلئے ہڈیوں کے سفوف کے ساتھ صاف کیا جاتا ہے۔

7۔بعض کمپنیاں بریڈ اور کیک میں کھادوں میں استعمال ہونے والا کیمیکل امونیم سلفیٹ ڈالتی ہیں۔

8۔ کچھ کمپنیوں کے چپس اور بسکٹ میں سور سے حاصل کئے گئے انز ائم پائے گئے ہیں۔

9۔ ڈبہ بند سلاد اور پالک میں پراپلین گلیسرول نامی کیمیکل شامل کیا جاتا ہے۔

10۔ اکثر ڈبہ بند غذاﺅں میں انسانی بالوں میں پایا جانے والا مادہ ایل سسٹین پایا گیا ہے جو نظام انہضام کیلئے مضر ہے۔

مزید : تعلیم و صحت