وی آئی پی کلچر کے خلاف آواز بلند کرنے پر شہری کو نوکری سے نکال دیا گیا

وی آئی پی کلچر کے خلاف آواز بلند کرنے پر شہری کو نوکری سے نکال دیا گیا
وی آئی پی کلچر کے خلاف آواز بلند کرنے پر شہری کو نوکری سے نکال دیا گیا

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) وی آئی پی کلچر کے خلاف آواز اٹھانے والے پاکستانی شہری ارجمند کو نوکری سے نکال دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق چند روز قبل اپنی نوعیت کا انوکھا واقعہ بے نظیر انٹرنیشنل ائر پورٹ پر پیش آیا جب جہاز کو سابق وزیر داخلہ رحمان ملک اور مسلم لیگ ن کے ایم این اے رمیش کمار کی خاطر جہاز کو روکے رکھنے پر مسافروں نے احتجاج شروع کر دیا اور دونوں وی آئی پیز کو جہاز میں سفر کرنے کے لئے داخل نہ ہونے دیا گیا۔

اس واقعہ میں احتجاج کرنے والا عام شہری ارجمند بھی شامل تھا جس نے اس کلچر کے خلاف آواز بلند کی، لیکن اس کے انعام میں اسے اس کی کمپنی نے نوکری سے برخاست کر دیا۔ارجمند کا کہنا ہے کہ وہ ایک غیر سرکاری کمپنی " جیریز" میں ملازمت کر رہا تھا اور اس کے افسران نے اسے خود استعفٰی دینے کے لیے دباﺅ ڈالا اور یہ موقف اپنایا کہ ان پر استعفٰی لینے کے لیے شدید دباؤ ہے۔

اس کے انکار کے بعد انہوں نے خود اسے نوکری سے برخاست کر دیا۔ارجمند کا کہنا ہے کہ مجھے نوکری کی فکر نہیں بلکہ میں مطمئن ہوں کہ میں نے اس وی آئی پی کلچر کے خلاف آواز بلند کی۔

مزید : قومی /اہم خبریں