داعش پر بمباری کرنے و الی خاتون پائلٹ نئی مشکل میں گرفتار

داعش پر بمباری کرنے و الی خاتون پائلٹ نئی مشکل میں گرفتار
داعش پر بمباری کرنے و الی خاتون پائلٹ نئی مشکل میں گرفتار

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) شام میں عسکریت پسند گروپ دولت اسلامیہ (آئی ایس) کے ٹھکانوں پر امریکہ اور اتحادیوں کی طرف سے فضائی کاروائی کی ایک اہم خبر یہ بھی تھی کہ حملہ آور پائلٹوں میں متحدہ عرب امارات کی خاتون پائلٹ مریم المنصوری بھی شامل ہے۔ابھی مغرب میں اس خاتون پائلٹ کی حملوں میں شمولیت کا جشن منایا جا رہا تھا کہ خبر سامنے آ گئی ہے کہ مبینہ طور پر مریم کے خاندان نے اس سے لاتعلقی کا اظہار کر دیا ہے۔ایف 16 اڑانے والی خاتون پائلٹ کے خاندان کے مبینہ بیان میں اسے ناشکری قرار دیا گیا ہے اور مسلم ملک شام میں کیے جانے والے حملوں میں شمولیت پر اس کی مذمت کی گئی ہے۔

بیان میں آئی ایس کے جنگجوو¿ں کو ہیرو قرار دے کر ان کی حمایت کا اظہار بھی کیا گیا ہے۔فلسطینی خبر رساں ادارے " وطن نیوز ایجنسی" کے مطابق مریم کے خاندان نے باقاعدہ طور پر بیان جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ شام پر حملہ بد ترین جارحیت ہے اور ہم اس میں شامل سب لوگوں کی سخت مذمت کرتے ہیں۔اور اس مذمت کا آغاز اپنی ناشکری بیٹی مریم المنصوری سے کرتے ہیں۔بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ مریم کے اعمال کے لیے اس کے خاندان کو ذمہ دار نہ ٹھہرایا جائے۔

مزید : بین الاقوامی