اتحاد و اتفاق کو فروغ دیناتمام مکاتب فکر کی ذمہ داری ہے،صاحبزادہ زاہد محمود

اتحاد و اتفاق کو فروغ دیناتمام مکاتب فکر کی ذمہ داری ہے،صاحبزادہ زاہد محمود

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)قومی یکجہتی ،اتحاد واتفاق اور بھائی چارے کی فضاء کو قائم کرنا تمام مکاتب فکر کی ذمہ داری ہے۔امن واک کے انعقاد کا مقصد مذہبی رواداری اور امن و امان کے پیغام کو عام کرنا ہے۔ محرم الحرام کو پر امن بنانے کیلئے تمام مکاتب فکر مشترکہ ضابطہ اخلاق کی پابندی کریں ۔ تمام مکاتب فکر قومی مفاد کی خاطر ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کریں تاکہ ملک میں کسی بھی قسم کا ناخوشگوار واقعہ رونما نہ ہوسکے۔ پاکستان میں امن وامان کے قیام ،قومی یکجہتی کے فروغ کیلئے تما م طبقات متحد ہیں ۔ہم اس عزم کا اظہار کرتے ہیں کہ وطن عزیز کو امن کا گہوارہ بنانے کیلئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کیا جائے۔یہ بات پاکستان علماء کونسل لاہور کے زیر اہتمام قومی یکجہتی ،اتحاد واتفاق اور امن وامان کے قیام کیلئے امن واک کی گئی۔ جس کی قیادت مرکزی چیئرمین صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی،کوآرڈینیٹر مذہبی امور ڈاکٹر عبد الغفور راشد،وائس چیئرمین پاکستان علماء کونسل حافظ شعیب الرحمن قاسمی،علامہ بشیر نظامی،علامہ یونس حسن،مولانا مشتاق لاہوری،حافظ مقبول احمد ،علامہ حسین اعوان،مفتی عبد الرحمن ، مولانا عثمان فاروقی، مولانا رسال الدین آزاد،حافظ سعید احمد میو،پیر حافظ محمد اسماعیل،مولانا شفیق الرحمن نقشبندی، مولانا عمادالدین ، مولانا ضیاء الرحمن فاروقی،مولانا انتظار عثمانی،حافظ طلحہ فاروقی ودیگر نے کی۔امن واک کے بعد ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی نے کہا کہ محرم میں امن قائم کرنے کیلئے تمام مکاتب فکر کا حکومت ،قانون نافذ کرنے والے اداروں اور افواج پاکستان کے ساتھ تعاون مثالی ہے جو آئندہ بھی جاری رہے گا۔ ملک کے جید علماء کرام وطن عزیز میں امن و سلامتی اور مذہبی ہم آہنگی کو برقرار رکھنے کیلئے اپنا فعال کردار اداکرتے رہیں گے۔ محرم الحرام امن وآتشی کا درس دیتا ہے۔سیدنا امام حسینؓ نے انسانیت اور اسلام کی بقاء کیلئے قربانی دی ۔ محرم کے ایام میں ان کی شان اور مناقب بیان کئے جائیں اور ایک دوسرے کے عقیدے اور اکابر کا احترام کیا جائے ۔ فرقہ وارانہ گفتگو سے پرہیز کیا جائے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -