خیبرپختونخواہ کو بجلی کا خالص منافع دینے میں حکومتی ٹال مٹول افسوسناک ہے: سراج الحق

خیبرپختونخواہ کو بجلی کا خالص منافع دینے میں حکومتی ٹال مٹول افسوسناک ہے: ...

  

تیمرگرہ (این این آئی) جماعت اسلامی کے مرکزی آمیر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ کثیر المقاصد منصوبہ کو ٹو ہائیڈ پاور پر اجیکٹ سے نہ صرف صوبے کو خاطر خواہ آمدنی ہوگی بلکہ ضلع دیر میں تر قی کے نئے دور کا آغاز ہوگا صوبے میں 40ہزار میگا واٹ بجلی پیدا ہونے کی گنجاش موجود ہے انر جی کے بغیر تر قی ناممکن ہے وفاقی حکومت اور واپڈا نے 1954 ء سے بوسیدہ بجلی لائنز کو جلد ازجلد تبدیل نہ کیے تو عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے کوٹو ہائیڈ پاور پر اجیکٹ کے تفصیلی دورہ کے موقع پر پریس کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ممبر قومی اسمبلی صاحبزاہ محمد یعقوب خان،صوبائی وزیر خزانہ مظفر سید ایڈوکیٹ ممبران صوبائی اسمبلی اعزاز الملک افکاری،سعید گل ضلع ناظم حاجی محمد رسول خان،تحصیل ناظمین اور پر اجیکٹ ڈائیر یکٹر سلطان روم اور دیگر اعلیٰ حکام بھی موجو دتھے مرکزی امیر سراج الحق نے منصوبہ کا مکمل معائنہ کیا اور جاری کام پر اطمینان کا اظہار کیا سراج الحق نے کہاکہ مرکزی حکومت بجلی کی لوڈشیڈنگ پر قابو پانے میں مکمل ناکام ہے۔انھوں نے کہاکہ خیبر پختون خواہ میں چالیس ہزار میگا واٹ بجلی پید اکرنے کی گنجاش موجود ہے۔ صوبائی حکومت نے صوبے کے آٹھ ہزار سے زائدسرکاری سکولوں کو سولر سسٹم نصب کرنے پر کام کا عملی آغاز کر دیا ہے۔ انھوں نے ملاکنڈ ڈویژن میں 1954ء سے بوسیدہ بجلی لائن سسٹم پر افسوس کا اظہار کیا۔انھوں نے مرکزی حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہاکہ بجلی کی خالص منافع میں وفاقی حکومت مسلسل ٹال مٹول سے کام لے رہی ہے اور صوبہ کو اپنا آئینی حق نہیں دے رہے جو تشویشناک ہے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -