چارسدہ ،ضلع کونسل اجلاس سے اپوزیشن کابائیکاٹ ،اے اینپی ،دیگر جماعتیں سراپا احتجاج

چارسدہ ،ضلع کونسل اجلاس سے اپوزیشن کابائیکاٹ ،اے اینپی ،دیگر جماعتیں سراپا ...

  

چارسدہ (بیورو رپورٹ) ضلع کونسل اجلاس سے ا پو زیشن کا بائیکاٹ ۔اے این پی ، قومی وطن پارٹی اور جمعیت علمائے اسلام کے اراکین سراپا احتجاج بن گئے ۔ ضلعی حکومت پر کرپشن اور بے قاعدگیوں کے الزامات ۔ 75رکنی ایوان سے اپو زیشن کے 49ممبران کے بائیکاٹ کے بعد اجلاس ملتوی ۔ اپو زیشن کے الزامات بے بنیاد ہے ۔ اپو زیشن سے مل کر ایوان چلائینگے اور باہمی مشاورت سے مسائل حل کرینگے ۔ ضلع ناظم فہد ریاض ۔ تفصیلات کے مطابق کنوینر حاجی مصور شاہ کی طرف سے ضلع کونسل چارسدہ کا طلب کردہ اجلاس کورم پورا نہ ہونے کی وجہ سے آج تک ملتوی کر دیا ۔ 75رکنی ایوان میں تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کے مجموعی ارکان کی تعداد 25ہے مگر حکومت کے بیشتر اراکین اجلاس سے غیر حاضر رہے جبکہ اپو زیشن کے 50ممبران میں 49ممبران موجود تھے مگر اپو زیشن نے اجلاس سے بائیکاٹ کا اعلان کیا اور اسمبلی ہال سے باہر کھڑے رہے ۔ کورم پورا نہ ہونے کی وجہ سے کنوینر نے اجلاس ایک روز کیلئے ملتوی کر دیا ۔ بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے ضلع ناظم فہد ریاض اور کنوینر حاجی مصور شاہ نے کہاکہ اپو زیشن بے جا اور بے بنیاد الزامات لگا رہی ہے ۔ جماعت اسلامی اور تحریک انصاف اپو زیشن سے مل کر ایوان چلانا چاہتی ہے مگر اپو زیشن تعاون نہیں کر رہی ۔ انہوں نے کہاکہ اپو زیشن سے مل کر بجٹ پاس کرینگے اور ان کے تمام خدشات اور تحفظات دور کرینگے ۔ اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے اپو زیشن لیڈر قاسم علی خان محمد زئی ، جے یوآئی کے پارلیمانی لیڈر مفتی نور الامین اور اور قومی وطن پارٹی کے پیر رحمان اللہ نے تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کی ضلعی حکومت پر شدید تنقید کی اور کہا کہ ناظم اور نائب ناظم اعلی کرپشن اور بے قاعدگیوں میں ملوث ہیں ۔ ضلع ناظم اور نائب ناظم اعلی کی تبدیلی تک ایوان میں نہیں جائینگے ۔ انہوں نے کہاکہ حکومتی اراکین کے حلقوں میں ترقیاتی منصوبوں پر کام جار ی ہے جبکہ اپو زیشن کو نظر انداز کیا جارہا ہے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -