بونیر ،اے این پی کے پارلیمانی لیڈر شاہ جہان کا اجلاس سے واک آؤٹ

بونیر ،اے این پی کے پارلیمانی لیڈر شاہ جہان کا اجلاس سے واک آؤٹ

  

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)ضلعی حکومت میں شامل عوامی نیشنل پارٹی کے پارلیمانی لیڈر شاہ جہان عرف شاہ جی نے اپنے حکومت کے خلاف شہیدے سر میں ہونے والے فیسٹول کے فیصلوں میں نظرانداز کرنے کے خلاف اپنے ممبران سمیت اجلاس سے واک آوٹ کردیا ۔ضلع کونسل کے ممبران برائے نام ہے ۔اہم فیصلے ضلعی حکومت کی بجائے ضلعی انتظامیہ کررہی ہے ۔حکومت میں شامل ہونے کے باوجود فیسٹول کے لئے تاریح کا اعلان ضلعی انتظاامیہ نے کی ۔احتجاجی طور پر فیسٹول میں شرکت نہیں کروں گا ۔پارلیمانی لیڈر کے ساتھ اپوزیشن لیڈر حاجی صدیق اللہ اور اپوزیشن اراکین نے بھی واک میں انکاساتھ دیا ۔بونیر کی ضلعی حکومت چلنے کی قابل نہیں ہے ۔جس جگہ کا انتحاب کیا گیا وہ انتہائی غیر موزون ہے ۔حکومت میں شامل اے این پی کا واک آوٹ ضلعی حکومت کی ناکامی کی واضح ثبوت ہے ۔اپوزیشن لیڈر حاجی صدیق اللہ کی واک آوٹ کے موقع پر میڈیا سے گفتگوں ۔تفصیلات کے مطابق ضلع کونسل بونیر کا اجلاس زیر صدارت کنو نئیر یو سف علی خان منعقد ہوا جس میں سرکاری محکموں کے افسران اور کونسل کے اراکین نے شرکت کی ۔ضلعی انتظامیہ اور ضلعی حکومت کی مشترکہ کو شیشوں سے 13 اکتوبر سے شروع ہونے والے تین روزہ فیسٹیول پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے اے این پی کے پارلیمانی لیڈر شاہ جہان عرف شاہ جی نے کہا کہ کونسل کواعتماد میں لئے بغیر فیسٹول کے لئے تاریح کااعلان کرکے کونسل کو غیر اہم قراد دیاہے ۔ضلع ناظم ،ضلع نائب ناظم اور ڈپٹی کمشنر تینوں نے مل کر جس جگہ کا انتحاب کیاہے وہ انتہائی نامناسب ہے ۔وہاں پر پینے کے پانی کا ایک بوند بھی نہیں ہے ۔فیسٹول کے لئے لاکھوں روپے ضلعی حکومت مہیا کررہی ہے جبکہ خرچ کرنے کے سارے اختیارات اور فیصلے ڈی سی بونیر کررہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اس قسم کے فیصلوں میں نظر انداز کرنے پر میں اپنے ممبران سمیت اجلاس سے واک آوٹ کرتاہو اور اس فیسٹول میں شرکت نہیں کروں گا ۔کونسل میں اپوزیشن لیڈر حاجی صدیق اللہ نے واک آوٹ میں انکا ساتھ دیتے ہوئے کہا کہ جس جگہ کا انتحاب فیسٹول کے لئے کیاگیاہے وہ غیر موزون ہے ۔انہوں نے کہاکہ اے این پی اور جماعت اسلامی کی بونیر میں ضلعی حکومت قائم ہیں ۔اور یہ سب سے بڑی ناکام حکومت ہے ۔جو اپنے فیصلوں میں بے اختیار ہیں ۔یونین کونسل گدیزی سے ممبر ضلع کونسل سردار علی خان نے قرارداد پیش کرتے ہوئے کہا کہ بونیر ضلع میں دارالامان نہ ہونے کی وجہ سے بہت سے مسائل کا سامناہے ۔دارلامان کے لئے میں بلڈنگ دینے کو تیار ہو انہوں نے ایک اور قرار داد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پیربابا جو بونیر کا مرکزی مقام ہے ۔ضلع کے تمام بازاروں میں تجاوزات کے خلاف اپریشن کئے گئے مگر چند بااثر افراد کی وجہ سے پاچا بازار میں تجاوزات کے خلاف ابھی تک کوئی ایکشن نہیں لیا گیا ۔بونیر کی ضلعی حکومت جلد از جلد پاچا بازار میں تجاوزات کے خلاف اپریشن کرے ۔کونسل کے اجلاس سے ممبران گل محمد خان عرف طوطا ۔کامران خان ۔جاوید اقبال خان ۔انعام الرحمان ایڈوکیٹ ۔تاج فروش خان ۔افسر خان ۔سید اختیار باچا اور دیگر نے بھی بہت سے مسائل پر بحث کئے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -