نائن الیون کے بعد سب سے زیادہ قیمت پاکستان نے چکائی : احسن اقبال

نائن الیون کے بعد سب سے زیادہ قیمت پاکستان نے چکائی : احسن اقبال
نائن الیون کے بعد سب سے زیادہ قیمت پاکستان نے چکائی : احسن اقبال

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے علاقائی تعاون کی ضرورت ہے، پاکستان ترقی کے لئے مستحکم ماحول پیدا کرنے کا خواہاں ہے، خطے میں امن و امان واستحکام کے لئے تمام ممالک کو مل کر کام کرنا ہے، پاکستان پر مغربی میڈیا اکثر “دہشتگردی کی جڑ” ہونے کے حوالے سے تنقید کرتا ہے لیکن پاکستان خود دہشت گردی کا شکار ہے اس لئے ہم پر الزام لگانا درست نہیں،نائن الیون کے بعد افغانستان پر امریکی حملے کی سب سے زیادہ قیمت پاکستان نے چکائی ہے۔

انڈونیشیا،آتش فشاں پھٹنے کا خوف، سوا لاکھ افراد نقل مکانی کر گئے

چینی اخبار ” گوبل ٹائم” کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہاکہ اگر خطے کاایک حصہ غیر محفوظ ہو تو اس سے پورا خطہ لپیٹ میں آسکتا ہے۔ پاکستان کی حکومت نے پشاور میں سکول پر حملے اور دیگر واقعات میں ملوث عناصر کے خلاف اہم کارروائیاں کی ہیں اور دہشت گرد گروپس کا نیٹ ورک توڑ دیا ہے۔ افغانستان کے مسئلے کا سیاسی حل تلاش کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ امریکی قیادت میں افغانستان کے مسئلہ کا فوجی حل ایک عشرے سے زائد کاحل نہیں نکالا جاسکا۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں تمام علاقائی ممالک کو اس مسئلے کے حل میں شامل کرنا چاہیے ,کیونکہ افغانستان کے ہمسائیہ ممالک کا اس کے استحکام میں سب سے زیادہ مفاد وابستہ ہے۔ افغانستان 2001ءسے پہلے کے مقابلے میں آج زیادہ مستحکم نہیں ہے، پاکستان کو مغربی سرحد سے دراندازی کا خطرہ بدستور درپیش ہے، جس سے نپٹنے کے لئے سیکورٹی فورسز بھرپور کردار ادا کر رہی ہیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -