بچوں کو کورونا وائرس سے بچانے کے لیے ماں کے دودھ کا حیران کن فائدہ تازہ تحقیق میں سامنے آ گیا

بچوں کو کورونا وائرس سے بچانے کے لیے ماں کے دودھ کا حیران کن فائدہ تازہ تحقیق ...
بچوں کو کورونا وائرس سے بچانے کے لیے ماں کے دودھ کا حیران کن فائدہ تازہ تحقیق میں سامنے آ گیا
کیپشن:    سورس:   creative commons license

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) ماں کا دودھ بچے کے لیے بے بہا طبی فوائد کا حامل ہوتا ہے اور اب نئی تحقیق میں کورونا وائرس کے حوالے سے بھی اس کا حیران کن فائدہ سامنے آ گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق بیجنگ یونیورسٹی آف کیمیکل ٹیکنالوجی کے سائنسدانوں نے اپنی اس تحقیق میں بتایا ہے کہ ماں کا دودھ کوروناوائرس کے خلاف بھی مزاحمت کا حامل ہو سکتا ہے، خواہ مریض میں اس وائرس کے خلاف برسرپیکار ہونے والی اینٹی باڈیز بھی موجود نہ ہوں۔

اس تحقیق میں سائنسدانوں نے صحت مند انسانی خلیے لے کر ان پر تجربات کیے۔ کچھ خلیوں کو انہوں نے عورت کے دودھ میں مکس کرکے انہیں کورونا وائرس کی زد میں رکھا جبکہ کچھ خلیوں کو دودھ میں مکس کیے بغیر کورونا وائرس سے متاثر کروایا۔ نتیجہ یہ سامنے آیا کہ جن خلیوں کو انسانی دودھ میں مکس کیا گیا تھا ان میں سے بیشتر خلیوں میں کورونا وائرس داخل ہی نہیں ہوا تھا اور جن خلیوں میں داخل ہو گیا وہاں اپنی مزید کاپیاں بنانے اور اپنی تعداد بڑھانے میں ناکام رہا۔ سائنسدانوں نے یہ تجربہ گائے اور دیگر جانوروں کے دودھ پر بھی کیا۔ گائے اور بکری کے دودھ نے انسانی خلیوں کو کورونا وائرس سے 70فیصد محفوظ رکھا جبکہ انسانی دودھ نے خلیوں کواس موذی وائرس سے 100فیصد بچایا۔

واضح رہے کہ ماں کے دودھ کے ایسے ہی فوائد پہلے بھی کئی تحقیقات میں ثابت ہو چکے ہیں جن کے بعد عالمی ادارہ صحت نے بچوں کو دودھ پلانے والی ماﺅں کے لیے ہدایت جاری کر رکھی ہے کہ خواہ وہ کورونا وائرس میں مبتلا بھی ہو جائیں، تب بھی اپنے بچوں کو دودھ پلانا جاری رکھیں، کیونکہ غالب امکان ہے کہ وائرس سے متاثرہ دودھ میں اینٹی باڈیز موجود ہوں گی جو ان کے بچوں کو وائرس کے حملے سے بچائیں گی۔ 

مزید :

تعلیم و صحت -