حنیف  عباسی کو  50 لاکھ روپے ہرجانہ ،ڈاکٹر شہباز گل نے عدالتی فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے نواز شریف کو ذمہ دار ٹھہرا دیا 

حنیف  عباسی کو  50 لاکھ روپے ہرجانہ ،ڈاکٹر شہباز گل نے عدالتی فیصلے کو تاریخی ...
حنیف  عباسی کو  50 لاکھ روپے ہرجانہ ،ڈاکٹر شہباز گل نے عدالتی فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے نواز شریف کو ذمہ دار ٹھہرا دیا 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق رکن قومی اسمبلی حنیف  عباسی کو راولپنڈی کی مقامی عدالت نے شوکت خانم کینسر ہسپتال کی انتظامیہ پر کرپشن کے سنگین الزامات عائد کرنے پر ہتک عزت اور ہرجانہ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے انہیں 50 لاکھ روپے ہرجانہ اداکرنے کا حکم سنایا ہے ،عدالتی فیصلے  کے بعد  ڈاکٹر شہباز گل بھی خوشی سے پھولے نہ سماتے ہوئے میدان میں آئے ہیں اور حنیف عباسی بارے ایسی بات کہہ دی ہے کہ نون لیگی قیادت بھی پریشان ہو جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق شوکت خانم ہرجانہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ""پاکستان کی تاریخ میں ایک اچھا دن، جب ایک معزز عدالت نے حنیف عباسی جیسے غلیظ آدمی کی طرف سے پھینکا گیا گند آج شوکت خانم کینسر ہسپتال کی دیوار سے دھو ڈالا۔پاکستان میں اس طرح کی غلاظت اور گندگی پر مبنی سیاست کا سہرا بھی مجرم نواز شریف کو جاتا ہے جس نے ایسے گندے لوگوں کو نوازا۔

یاد رہے کہ راولپنڈی کی مقامی عدالت نے شوکت خانم ہسپتال ہرجانہ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے نون  لیگی رہنما اور سابق رکن قومی اسمبلی  حنیف عباسی کو 50 لاکھ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج صاحبزادہ نقیب شہزاد نے کیس کا فیصلہ سنایا تاہم مسلم لیگی رہنما حنیف عباسی فیصلہ سننے عدالت نہ آئے۔عدالت نے شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال انتظامیہ  کے خلاف حنیف عباسی کے تمام الزامات کو مسترد کردیا۔ مسلم لیگی رہنما نے شوکت خانم ہسپتال انتظامیہ پر کئی سال قبل سنگین کرپشن کے الزامات لگائے تھے لیکن ان الزامات کو وہ ثابت نہ کرسکے۔ہسپتال انتظامیہ نے  2012 میں حنیف عباسی پر 10 ارب روپے کے ہرجانہ کا مقدمہ دائر کرتے ہوئے ان الزامات کو ہسپتال کی ساکھ خراب کرنے کی کوشش قرار دیا تھا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -