مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری؟ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے دو ٹوک انداز میں حکومتی پالیسی بیان کر دی

 مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری؟ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے دو ٹوک انداز ...
 مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری؟ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے دو ٹوک انداز میں حکومتی پالیسی بیان کر دی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہاہے  کہ پی ڈی ایم   کی تحریک کو دیکھنے کے لئے کوئی کمیٹی بنی اس کا پتہ نہیں ، فضل الرحمان پہلے دن سے ہی حکومت کو تسلیم نہیں کیا ،شروع سے ہی تحریک چلانے کا کہتے رہے اگر ان میں کوئی دم خم ہوتا تو حکومت ختم ہو چکی ہوتی،خواہشات سب کی ہیں ، جلسہ کرنا ہے تو شوق سے کریں ، ملک میں جمہوریت ہے، مولانا فضل الرحمان کو حکومت گرفتار نہیں کرے گی۔

نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا کہ پی ڈی ایم  کو دیکھنے کے لئے کوئی کمیٹی بنی اس کا پتہ نہیں،مولانا فضل الرحمان پہلے دن سے ہی حکومت کو تسلیم نہیں کیا،شروع سے ہی تحریک چلانے کا کہتے رہے ،اگر ان میں کوئی دم خم ہوتا تو حکومت ختم ہو چکی ہوتی،خواہشات سب کی ہیں،جلسہ کرنا ہے تو شوق سے کریں, ملک میں جمہوریت ہے۔انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کو حکومت گرفتار نہیں کرے گی، ان کے خلاف سخت چارجز ہیں تاہم  اگر نیب کچھ کرتی ہے تو اس میں ہمارا کوئی ہاتھ نہیں۔انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن سے گزارش ہے کہ بچوں کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نہ کریں، فضل الرحمان کی عوام میں کوئی پذیرائی ہے ،نہیں مدارس کےبچوں کو اکٹھا کرکےمجمع لگالیتےہیں،کوروناکی وجہ سےمدارس میں بھی تدریسی عمل متاثرہواہے۔

انہوں نےکہاکہ نواز شریف کو پچاس سال سے جانتا ہوں،وہ میرے کلاس فیلو رہے ہیں،وہ عوام میں کچھ اور اندرون خانہ کچھ اور ہی کہتے ہیں،ان کے قول وفعل میں تضاد ہے،اسحاق ڈار کو کسی کیس میں سزا نہیں ہوئی جبکہ نوازشریف سزا یافتہ مجرم  ہیں،عسکری قیادت سے اندرون خانہ ملاقات کے لئے کبھی محمد زبیر جا رہے ہیں،شہباز شریف بھی کئی دفعہ جا کر ملے ہیں اور بھی کئی لوگ گئے ہونگےجو عسکری قیادت سے ملتے رہے ہیں، عسکری قیادت سے جتنے لوگ بھی ملےوہ نواز شریف کی اجازت سےملےہیں۔ انہوں نے کہا کہ شیخ رشیدکیس دیکھ کر اندازہ لگا لیتےہیں کہ متوقع نتیجہ کیاہوگا ؟۔

مزید :

قومی -