سپریم کورٹ نے بلدیاتی انتخابات کی تاریخ مانگ لی ،الیکشن نہ کرانے والی حکومت گھرجاسکتی ہے:چیف جسٹس

سپریم کورٹ نے بلدیاتی انتخابات کی تاریخ مانگ لی ،الیکشن نہ کرانے والی حکومت ...
سپریم کورٹ نے بلدیاتی انتخابات کی تاریخ مانگ لی ،الیکشن نہ کرانے والی حکومت گھرجاسکتی ہے:چیف جسٹس

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے کہاکہ 2013ءمیں بھی بلدیاتی انتخابات ہوتے نظرنہیں آرہے اور اگر کسی نے بلدیاتی انتخابات سے متعلق پٹیشن دائر کردی تو منتخب حکومت کے لیے مشکلات پیداہوسکتی ہیں، گھر بھی جاسکتی ہے ۔عدالت نے انتخابات کی تاریخ اور ووٹر لسٹوں سے متعلق جمعرات تک جواب طلب کرلیا۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ کے روبرو کوئٹہ رجسٹری میں بلدیاتی انتخابات سے متعلق چاروں صوبوں سے رپورٹ پیش کی گئی ۔چیف جسٹس نے پنجاب حکومت کی رپورٹ پر عدم اعتماد کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ رپورٹ دیکھنے سے لگتاہے کہ 2013ءمیں بھی بلدیاتی انتخابات نہیں ہوں گے۔ اُنہوں نے کہاکہ آئین کی توہین کسی صورت نہیں ہونے دی جائے گی جبکہ حکومت آئین پر عمل درآمد کی پابند ہے ۔ عدالت نے کہاکہ اگر کسی نے بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کے لیے درخواست دائر کردی تو منتخب شدہ جمہوری حکومت گھرجاسکتی ہے ۔ عدالت نے کہاکہ آمر وقت سے پہلے بلدیاتی انتخابات کرادیتے ہیں، کسی نے 90دن میں انتخابات کا اعلان کیالیکن گیارہ سال تک نہیں کرائے۔ تمام سیکرٹری بلدیات جمعرات تک بتائیں، انتخابات کے لیے کونسی تاریخ دیں گے اورالیکشن کمیشن بتائے کہ ووٹر لسٹ کب تک تیار ہوجائے گی۔

مزید : قومی