روس ہمسایہ ملک یوکرائن پر حملہ نہیں کرے گا‘ وزیر دفاع

روس ہمسایہ ملک یوکرائن پر حملہ نہیں کرے گا‘ وزیر دفاع

  



 ما سکو (آن لائن)یوکرائنی بحران پر بات چیت کے لیے امریکی وزیر دفاع چک ہیگل اور ا±ن کے روسی ہم منصب سیرگئی شوئی گو نے ٹیلی فون پر رابطہ کیا، جس میں روسی وزیر دفاع نے ہیگل کو یقین دہانی کرائی کہ روس ہمسایہ ملک یوکرائن پر حملہ نہیں کرے گا۔امریکی محکمہء دفاع پینٹاگون کے ترجمان ریئر ایڈمرل جان کربی نے واشنگٹن میں بتایا کہ وزرائے دفاع کے درمیان ہونے والی بات چیت میں سیرگئی شوئیگو نے چک ہیگل کو یقین دلایا کہ روسی افواج یوکرائن پر حملہ نہیں کریں گی۔ چک ہیگل اور ا±ن کے روسی ہم منصب سیرگئی شوئیگو کے مابین ہونے والی یہ گفتگو قریب ایک گھنٹے تک جاری رہی۔روسی وزارت دفاع کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق شوئیگو نے ہیگل کو بتایا کہ یوکرائنی سرحد پر جنگی مشقوں کے بعد روسی افواج اب اپنے بیرکس میں واپس جا چکی ہیں۔ تاہم شوئیگو نے روسی سرحدوں پر نیٹو اور امریکی افواج کی اضافی سرگرمیوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امریکا بھی کشیدگی کو کم کرنے کے سلسلے میں اقدامات اٹھائے۔دریں اثناءجرمن وزیر خارجہ فرانک والٹر اشٹائن مائر نے بتایا کہ انہوں نے ماسکو پر زور دیا ہے کہ وہ مشرقی یوکرائن میں صورتحال کو بہتر بنانے کے لیے اقدامات اٹھائے۔

مشرقی یوکرائن میں روس نواز علیحدگی پسندوں نے متعدد سرکاری عمارات پر قبضہ کر رکھا ہے جبکہ مسلح افراد نے پچھلے ہفتے سے چند یورپی مبصرین کو بھی یرغمال بنا رکھا ہے۔ ناروے کے دارالحکومت اوسلو سے جاری کردہ اپنے اس بیان میں جرمن وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ وہ گزشتہ جمعے سے یرغمال بنائے جانے والے سات یورپی مبصرین، جن میں تین جرمن بھی شامل ہیں، کی بازیابی کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں۔اشٹائن مائر کے بقول ا±ن کے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف نے یقین دہائی کرائی ہے کہ ماسکو حکومت اِسی ماہ جنیوا میں طے پانے والے سفارتی سمجھوتے کی مکمل حمایت کرتی ہے اور ا±س نے مشرقی یوکرائن میں تمام فریقوں پر زور دیا ہے کہ وہ ہتھیار پھینک دیں۔

مزید : عالمی منظر