ٹریفک قوانین توڑنا حرام اور گناہ کبیرہ ہے ،سعودی مفتی اعظم کا فتوی

ٹریفک قوانین توڑنا حرام اور گناہ کبیرہ ہے ،سعودی مفتی اعظم کا فتوی

  



                                                                  ر یاض(آن لائن)سعودی عرب کے مفتی اعظم عبدالعزیز آل الشیخ نے سڑکوں پر لگے ٹریفک کے سرخ اشارے توڑنے والے ڈرائیوروں کے خلاف ایک مرتبہ پھر فتویٰ جاری کیا ہے اور کہا ہے کہ ایسا کرنا گناہ کبیرہ اور حرام ہے۔العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق مفتی اعظم نے اپنے فتویٰ میں کہا ہے کہ ٹریفک قوانین کی اس طرح کی خلاف ورزی گناہ کبیرہ کے زمرے میں آتی ہے۔انھوں نے اس ضمن میں قرآن مجید کی ایک آیت کا حوالہ دیا ہے جس میں اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرمایا ہے کہ ''جس نے ایک انسان کو قتل کیا ،اس نے گویا پوری انسانیت کو قتل کردیا اور جس نے ایک شخص کو بچایا ،اس نے گویا پوری انسانیت کو بچا لیا۔انھوں نے قبل ازیں 2010ءمیں اسی قسم کا ایک فتویٰ جاری کیا تھا جس میں انھوں نے کہا تھا کہ جو کوئی بھی ٹریفک قانون کی اس طرح کی خلاف ور زی کے ذریعے کسی کی موت کا موجب بنتا ہے تو وہ قتل عمد کا مجرم گردانا جائے گا۔واضح رہے کہ سعودی عرب میں کار حادثات کی شرح دنیا میں سب سے زیادہ ہے۔یو اے ای کے روزنامہ گلف نیوز میں حال ہی میں شائع شدہ ایک رپورٹ کے مطابق سعودی مملکت میں اوسطاً روزانہ سترہ افراد سڑکوں پر حادثات کی نذر ہوجاتے ہیں۔

سعودی عرب کی نظامت عامہ برائے ٹریفک نے 2010ءمیں جاری کردہ اپنی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا تھا دارالحکومت الریاض میں سڑکوں پر ایک تہائی حادثات ڈرائیور حضرات کی جانب سے ٹریفک اشاروں کی خلاف ورزیوں کی وجہ سے پیش آتے ہیں۔

مزید : عالمی منظر