جسم میں ٹریکر کا الزام، شوہر سمیت 5افراد کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پرفیصلہ محفوظ

جسم میں ٹریکر کا الزام، شوہر سمیت 5افراد کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست ...

  



لاہور(نامہ نگار)بدکاری سے انکار کرنے پر شوہر کی جانب سے بے ہوش کرکے جاسوسی کے لئے جسم میں ٹریکر رکھوانے کے الزام میں مبینہ طور پرجوڈیشل مجسٹریٹ اور شوہر سمیت 5افراد کے خلاف دائر اندراج مقدمہ کی درخواست پر ایڈیشنل سیشن جج صفدر علی بھٹی نے فیصلہ آج تک محفوظ کرلیا ہے ۔فاضل عدالت میں گزشتہ روز مذکورہ درخوست کی سماعت کی گئی ۔عدالت میں درخواست گزار صغراں بی بی کے شوہر نے موقف اختیار کیا کہ اسکی بیوی کا کردار ٹھیک نہیں ہے اور اس کی جانب سے لگائے گئے الزامات بھی جھوٹے ہیں جس کے بعد فاضل عدالت نے فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے سماعت آج 30اپریل تک ملتوی کردی ہے۔فاضل عدالت میں درخواست گزار تھانہ غازی آباد کی رہائشی خاتون صغراں بی بی نے اپنے وکیل سید محمود الحسن گیلانی کی وساطت سے دائر درخواست میں موقف اختیار کررکھا ہے کہ کہ سائلہ کا شوہر محمد سلیم اس سے زبردستی بد کاری کرواتا اور اس کے لئے وہ مشتاق کباڑیہ ،فیاض، اورمبینہ طور پرجوڈیشل مجسٹریٹ کینٹ کچہری محمد اکرم آزاد کو گھر میں لاتا رہا اورسائلہ کافی عرصہ تک برداشت کرتی رہی جس کے بعد وہ اپنے دونوں بچوں کو ساتھ لے کر گھر سے بھاگ گئی لیکن مذکورہ ملزمان نے اسکا سراغ لگا کر سائلہ کے ناک پر رومال رکھ کر اسے بے ہوش کرکے ساتھ لے گئے اور سروسز ہسپتال میں لا کر سائلہ کے جسم میں جاسوسی کے لئے ٹریکر لگوا دیا

 تاکہ میں جہاں جاﺅں ان کو اس کا علم رہے ۔لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ وہ قانون کے مطابق کارروائی کی جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...