پی ایچ اے نے باغ جناح جیسا پبلک نباتاتیپارک تیار کرلیا

پی ایچ اے نے باغ جناح جیسا پبلک نباتاتیپارک تیار کرلیا

  



لاہور(اپنے نمائندے سے)برطانوی عہد میں بنائے جانے والے نباتاتی و تفریحی پارک باغِ جناح کے بعد یہ لاہور کا پہلا پبلک نباتاتی پارک ہے جہاں پودوں میں دلچسپی لینے والے خواتین و حضرات کی آمدو رفت بلا کسی پیشگی اجازت اور بغیر ٹکٹ ممکن ہوسکے گی80 ایکٹر پر محیط اس باغ میں 672 مختلف اقسام کے ملکی و غیر ملکی پھل دار درخت ، جھاڑیاں اور پھول دار پودے لگائے گئے ہیںپھل دار درختوں میں تھائی لینڈ سے درآمد شُدہ آم، امرود،جامن اور لیچی کے پودے قابلِ ذکر ہیں جبکہ جنوب مشرقی ایشےا ءکے مشہور پھل دورےان جو اپنی خوشبو اور ذائقے کی وجہ سے نہایت مقبول ہے کے پودے بھی لگائے گئے ہیںیہ درخت چار پارنچ سالوں میں پھل دینا شروع کر دیں گے درختوں کی دیگر اقسام کے علاوہ برِ صغیر کا مشہور درخت صندل اور چین کا جنکسنگ کا پودہ بھی تجرباتی طور پر لگاےا گےا ہے پھولوں میں گلاب کی468 اقسام کے علاوہ کئی اور دلکش پھولوں کے پودے بھی لگائے گئے

زینت ہیںباغِ جناح کے برعکس اس نباتاتی باغ میں مختلف انواع کے پودے مناسب گروہ بندی سے لگائے گئے ہیں ان پودوں کی پرورش کے دوران اس بات کا خاص خےال رکھا جارہا ہے کہ ان کو وہ ماحول میسر ہو

جس میں یہ پروان چڑھ سکیںڈی جی پی ایچ اے نے اس سلسلہ میں مزید بتاےا کہ دوسرے مرحلے میں اس باغ کے ساتھ تفریحی سہولتیں بھی بنائی جائیں گی تاکہ یہ نباتات کے طالب علموں کے علاوہ عام لوگوں کی دلچسپی کا باعث بھی بنے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...