سکون آور ادویات ہمیشہ کے لئے ’سکون‘ دے دیتی ہیں

سکون آور ادویات ہمیشہ کے لئے ’سکون‘ دے دیتی ہیں
سکون آور ادویات ہمیشہ کے لئے ’سکون‘ دے دیتی ہیں

  



بوسٹن (بیورورپورٹ) کبھی کبھی زندگی کے مصائب سے چھٹکارے کی کوشش اور سکون کی تلاش کا نتیجہ موت کی صورت میں بھی نکل سکتا ہے۔ امریکہ میں کی گئی ایک تحقیق سے پتا چلا ہے کہ وہ نوعمر افراد جو معمول سے زیادہ سکون آور ادویات کا استعمال کرتے ہیں ان میں خودکشی کا رجحان دوسرے نوعمر افراد کی نسبت دوگنا ہوسکتا ہے۔ اس تحقیق میں ایک لاکھ باسٹھ ہزار نوعمر افراد کا مطالبہ کیا گیا اور یہ معلوم ہوا کہ سکون آور ادویات کا زیادہ استعمال 25 سال سے کم عمر افراد کیلئے انتہائی خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ڈاکٹروں کو چاہیے کہ ان خدشات کے پیش نظر نوعمر افراد کو سکون آور ادویات دینے سے اعتراز کریں اور ایسے مریضوں کا انتہائی باقاعدگی سے معائنہ جاری رکھیں۔ تاہم زیادہ عمر کے لوگوں کیلئے سکون آور ادویات کو اس قدر نقصان دہ نہیں پایا گیا۔

مزید : تعلیم و صحت