زور سے ہاتھ پکڑنا بھی جرم ٹھہرا

زور سے ہاتھ پکڑنا بھی جرم ٹھہرا
زور سے ہاتھ پکڑنا بھی جرم ٹھہرا

  



بکنگھم شائر (بیورورپورٹ) مغربی ممالک میں بچوں کے حقوق کو بہت سنجیدگی سے لیا جاتا ہے اور چھوٹی سے چھوٹی غلطی بھی کارروائی کاموجب بن سکتی ہے۔ کچھ ایسا ہی واقعہ برطانیہ کے شہر بکنگھم شائر میں پیش آیا کہ جہاں بچوں کے حقوق کیلئے کام کرنے والے کارکنوں نے جب یہ دیکھا کہ سڑک پار کرتے ہوئے والدین نے بچوں کے ہاتھ بہت سختی سے تھام رکھے ہیں تو فوری کارروائی کا فیصلہ کرلیا۔ بچوں کے ساتھ اس معمولی سختی کو اسقدر سنجیدگی سے لیا گیا کہ فوری طور پر متعلقہ حکام کو اطلاع دی گئی اور معاملے کی تحقیق کی گئی۔ تفصیلات کے سے معلوم ہوا کہ بچے مذکورہ خاندان نے گود لے رکھے تھے اور سڑک پر چلتے ہوئے والدین نے ان کے ہاتھ ضرورت سے زیادہ سختی سے تھام رکھے تھے جس کی وجہ سے ان کے ہاتھوں پر نشان پڑ گئے تھے۔ اس بات کی تصدیق ہوتے ہی حکام نے فیصلہ کیا کہ بچوں کو حکومتی فلاحی ادارے کے سپرد کیا جائے۔ ایک طرف بچوں کا اتنا خیال اور دوسری طرف ملک عزیز پاکستان میں بچوں کے قتل ہونے پر بھی کسی کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس