بجلی لوڈشیڈنگ میں اضافہ عوام کا شدیداحتجاج

بجلی لوڈشیڈنگ میں اضافہ عوام کا شدیداحتجاج

  



             لاہور(کامرس رپورٹر)ملک میں بجلی کی ڈیمانڈ میں بتدریج اضافہ کے باعث یومیہ بنیادوں پر لوڈ شیڈنگ کے دورانیہ میں اضافہ ہونے لگا جس سے معمولات زندگی ٹھپ ہو کر رہ گئے بار بار لوڈ شیڈنگ کے باعث اکثر علاقوں میں پانی کی قلت بھی شروع ہو گئی ۔ لیسکو سیمت دیگر ڈسکوز نے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ بھی بغیر کسی شیڈول کے شروع کر دی ۔ دن کے اوقات میں بعض بار پندرہ منٹ بعد ہی مزید ایک گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی جانے لگی۔ مختلف علاقوں میں ایک گھنٹے کے بعد دو دو گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ بھی کی گئی ۔ مرمت کے نام پر بھی تمام سب ڈویژنوں میں فیڈرز بند رکھنے کی تعداد بڑھا دی گئی بعض سب ڈویژنوں میں دو اور بعض میں تین تین فیڈر بند رکھے گئے گزشتہ روز بڑے شہروں میں تیرہ سے چودہ گھنٹے اور دیہی علاقوں میں اٹھارہ گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کی گئی بعض دیہی علاقوں میں اٹھارہ گھنٹے سے بھی زائد کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث ملک بھر میں اے سیز کا استعمال بڑھ رہا ہے جس ۔کے باعث بجلی کی ڈیمانڈ میں یومیہ کی بنیاد پر اضافہ ہو ر ہا ہے ۔ وزارت بجلی و پانی کے پیر کے روز ہونے والے اجلاس میں اس بات کو تسلیم کیا گیا ہے کہ پندرہ مئی کے بعد بجلی کی ڈیمانڈ میں نمایاں اضافہ متوقع ہے ۔ این ٹی ڈی سی کی جانب سے گزشتہ روز بھی شارٹ فال کے حوالے سے غلط ڈیٹا جاری کیا ۔ این ٹی ڈی سی کے مطابق ملک میں بجلی کا شارٹ فال صرف 3 ہزار 800 میگاواٹ ہے ان کے مطابق بجلی کی طلب 14 ہزار300 اور پیداوار دس ہزار 500 میگاواٹ ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...