موبائل فون گن، انتہائی سرعت کے ساتھ 4 راﺅنڈ فائر کرنے کی صلاحیت

موبائل فون گن، انتہائی سرعت کے ساتھ 4 راﺅنڈ فائر کرنے کی صلاحیت
موبائل فون گن، انتہائی سرعت کے ساتھ 4 راﺅنڈ فائر کرنے کی صلاحیت

  



نیو یارک(بیورورپورٹ)پہلی نظر میں تو یہ ایک سیل (موبائل) فون ہی لگتا ہے۔ وہی سائز، وہی شکل و صورت اور بالکل سیل فون جیسا، مگر اس کی ڈیجیٹل مشابہت کے نیچے ایک 22 بور کا پستول چھپا ہوا ہے۔ یہ ایک فون گن ہے جو انتہائی سرعت کے ساتھ 4 راﺅنڈ فائر کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ قانون کے نفاذ پر مامور یورپی آفیشیلز ان فون گنز کی دریافت پر حیران اور پریشان ہیں۔ جرمن پولیس یونین کے عہدیدار وولف گینگ ڈکی کے مطابق ”یہ ہمارے لیے ایک خطرے کاالارم ہے۔ اس کا صاف مطلب ہے کہ جب بھی کوئی مشتبہ شخص تلاشی کے دوران اپنے موبائل فون کی طرف ہاتھ بڑھائے تو پولیس اہلکاروں کو اپنے ہتھیار نکالنے پڑیں گے۔“ امریکہ میں ابھی تک تو ان نئے ہتھیاروں کی موجودگی ثابت نہیں ہو سکی مگر ایف بی آئی، الکوحل، تمباکو اور آتشیں ہتھیاروں کی بیوروز اور امریکی کسٹمز سروس کے اداروں کو ان ہتھیاروں کے متعلق جانکاری دی جا چکی ہے۔ امریکی کسٹمز سروس کے عہدیدار ریمنڈ ڈبلیو کیلی کا کہنا ہے کہ ”یہ مجرمانہ ایجاد قانون نافذ کرنے والے اداروں اور عام پبلک کے لیے ایک انتہائی سنجیدہ نوعیت کا خطرہ ہے۔ ہمیں ان ہتھیاروں کے متعلق آگاہی گزشتہ ماہ ہی حاصل ہوئی ہے اور ہم نے امریکہ میں داخلے کے مقامات پر تعینات اپنے اہلکاروں کو ہدایات دے دی ہیں کہ وہ ان ”سیل فون گنز“ کی تلاشی پر خصوصی توجہ مرکوز رکھیں۔“اطلاعات کے مطابق یہ ہتھیار پہلی دفعہ گزشتہ اکتوبر میں ایمسٹرڈیم میں اس وقت منظرعام پر آئے کہ جب پولیس نے منشیات کو برآمد کرنے کے لیے ایک خفیہ مقام پر چھاپہ مارا جبکہ دوسری دفعہ یہ ہتھیار اس وقت سامنے آئے کہ جب ہتھیاروں کے ایک سمگلر کو ہتھیاروں کی ایک کھیپ سلووینیا سے مغربی یورپ میں سمگل کرنے کی کوشش میں گرفتار کیا گیا۔ پولیس کو شک ہے کہ یہ دونوں کھیپ یوگوسلاویہ سے بھیجی گئی ہیں۔ اس سلسلے میں انٹرپول نے تمام قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلع کر دیا ہے۔ یورپ کی بارڈر پولیس اور کسٹمز افسران اس سلسلے میں ہائی الرٹ پوزیشن میں ہیں۔ جرمنی کی فیڈرل کریمینل انوسٹی گیشن ایجنسی کے اہلکار برگٹ ہائب کے مطابق: ”اگر آپ کو معلوم نہ ہو تو آپ کو شک بھی نہیں ہو سکتا کہ یہ آتشیں ہتھیار ہے۔ہاں جب آپ ان کو ہاتھ میں اٹھائیں گے تو ہی آپ کو احساس ہوگا کہ دیگر سیل فونز کی نسبت بھاری ہیں۔“ان سیل فون نما پستولوں کو آدھے سیل فون کو گھما کر یا مروڑ کر لوڈ کیا جاتاہے گولی سکرین کے نیچے لوڈ ہوتی ہے جبکہ ”کی پیڈ“ والے مقام کے نیچے فائرنگ پن نصب کی گئی ہے۔ گولی کو نمبر 5 سے 8 تک دبا کر فائر کیا جا سکتا ہے۔ جبکہ انٹینا والی جگہ سے گولی فائر ہوتی ہے۔ ایمسٹرڈیم پولیس کے مطابق ”یہ انتہائی نفیس ہتھیار ہیں۔ ان کو بنانا انتہائی مشکل ہے اور یقینا اس کو بنانے میں ماہرین کی مدد شامل ہے۔“

مزید : صفحہ آخر


loading...