کوٹلی باوا ،اغوا کے بعد کمسن بچی سے 4اوباشوں کی رات بھر بد اخلاقی ،2ملزم گرفتار

کوٹلی باوا ،اغوا کے بعد کمسن بچی سے 4اوباشوں کی رات بھر بد اخلاقی ،2ملزم ...

  



                                       بڈیانہ(نامہ نگار)تھانہ صدر پسرور کے علاقہ کوٹلی باوا سے چاربااثر افراد نے محنت کش کی 15سالہ بچی کو اغوا کیااور رات بھراسے بداخلاقی کا نشانہ بناتے رہے۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے دو ملزموں کو گرفتار کر لیا۔ دیگرملزمان کی گرفتاری کیلئے کرکے کیفر کردار تک پہنچایا جائیگا۔گرفتار ہونیوالا مرکزی ملزم سابق ایم ایل اے مقبول گجر کا بھانجا ہے، ڈی پی او سیالکوٹ محمد گوہر نفیس کی متاثرہ لڑکی کے گھر کے دورہ پر میڈیا سے گفتگو۔تفصیلات کے مطابق تھانہ صدر پسرور کے علاقہ کوٹلی باوا سے چاربااثر افرادسابق ایم ایل اے کے بھانجے ذیشان عرف شانی ،وقاص سمیت دیگرنے محنت کش حنیف کی کی 15سالہ بچی(ک) کواسکے گھر کے باہر سے اغوا کرکے اپنی کار میں ڈال کرنواحی گاﺅں رکن آباد میںآزادکشمیرحکومت کی طرف سے بنائے گئے ریسٹ ہاﺅس میں لے گئے اور رات بھر اپنی ہوس کا نشانہ بناتے رہے اور بچی کی حالت غیر ہونے پر اسے قریبی گاﺅں میں سڑک کے پاس پھینک کر فرار ہوگئے ۔بچی کی والدہ نے میڈیا کو بتایا کہ میں نے کشمیر ریسٹ ہاﺅس جاکر ملزمان کو خدارسول کے واسطے دیتی رہی کہ میری بچی کو چھوڑ دو لیکن ان پر شیطان سوار تھا اور انہوں نے مجھے وہاں سے دھکے دیکر باہرنکال دیا۔میری معصوم بچی کے ساتھ انہوں نے ظلم کیا ہے میرا وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ ہے کہ ملزمان کو گرفتار کرکے انکو قرارواقعی سزا دی جائے۔میڈیا کی ٹیم جب متاثرہ لڑکی کے گاﺅں پہنچی تو مشاہدے میں آیا کہ لڑکی انتہائی غریب فیملی سے تعلق رکھتی ہے اور اسکی 9 بہنیں اور ایک بھائی ہے ۔انکا گھر ایک کمرے پر مشتمل ہے ۔واقعہ کی اطلاع پرڈی پی او سیالکوٹ محمد گوہر نفیس متاثرہ لڑکی کی داد رسی کیلئے انکے گھر پہنچ گئے اور لڑکی کا میڈیکل کروا کر اسکو ہسپتال میں داخل کروایا۔اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی پی او سیالکوٹ نے کہا کہ گر فتار ہونیوالا مرکزی ملزم سابق ایم ایل اے مقبول گجر کا بھانجا ہے اور باقی ملزمان کو بھی جلد گرفتار کرلیا جائیگا۔

بداخلاقی

مزید : صفحہ آخر


loading...