اسرائیلی درندوں نے ایک مسجد شہید کردی

اسرائیلی درندوں نے ایک مسجد شہید کردی
اسرائیلی درندوں نے ایک مسجد شہید کردی

  



نابلس (نیوزڈیسک) مظلوم فلسطینیوں پر اسرائیلی مظالم کا سلسلہ کسی طور تھمنے میں نہیں آرہا۔ آئے روز معصوم بچوں، خواتین اور بزرگوں کو شہید کیا جاتا ہے اورفلسطینیوں کے گھر اور عیادت گاہیں بھی محفوط نہیں رہیں۔ ایک طرف علاقے میں امن کیلئے بات چیت ہورہی ہے تو دوسری طرف منگل کی صبح 18 اسرائیلی فوجی گاڑیوں اور 2 بلڈوزروں نے مغربی کنارے کے ایک گاؤں پر ہلہ بول دیا اور ایک مسجد اور متعدد گھروں کو مسمار کردیا۔ اسرائیلی فوجیوں نے حملے سے پہلے گاؤں کے لوگوں کو اپنے گھر چھوڑنے، باہر نکلنے اور یہاں تک کہ معصوم طلباء کو بھی سکول جانے سے منع کردیا اور گاؤں کو اسرائیل کے زیر قبضہ فوجی علاقہ قرار دے دیا۔ گاؤں کے رہائشی 63 سالہ عبدالفتح نے بتایا کہ وہ صبح کے وقت نماز ادا کرنے کیلئے پہنچا تو دیکھا کہ مسجد کو اسرائیلی فوجیوں نے گھیر رکھا ہے اور پھر انہوں نے مسجد کو گرانا شروع کردیا۔ عبدالفتح نے کہا کہ اسرائیلی فوج ان کے گھروں کو برباد کرکے وہاں اپنی آبادیان بنانا چاہتی ہے۔

مزید : بین الاقوامی