امریکہ کو ابھی بھی چین نہیں آیا

امریکہ کو ابھی بھی چین نہیں آیا
امریکہ کو ابھی بھی چین نہیں آیا

  



واشنگٹن (بیورورپورٹ) دنیا بھر میں میڈیا نہ صرف لوگوں تک خبریں پہنچانے کا ذریعہ ہے بلکہ مخالفین کے خلاف پراپیگنڈہ کا بھی بہت بڑا ہتھیار ہے اور اس ہتھیار کا استعمال دنیا کی واحد سپر پاور امریکہ سے زیادہ کوئی نہیں کررہا۔ لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ امریکی دنیا بھر میں جاری اپنے پراپیگنڈہ مشن سے مطمئن نہیں اور اس میں مزید اضافہ کرنے جارہے ہیں۔ امریکی سیاستدان ایک ایسے بل پر غور کررہے ہیں کہ جیسے امریکی پراپیگنڈہ کو مزید پھیلانے اور طاقتور بنانے کیلئے عنقریب امریکی کانگریس میں پیش کیا جارہا ہے۔ امریکی رہنماؤں کا خیال ہے کہ وائس آف امریکہ جیسے امریکی ریڈیو اور دیگر ذرائع ابلاغ کا مقصد امریکی پالیسی کو دنیا پر حاوی کرنا ہے اور اس کیلئے انہیں مزید کوششیں کرنا ہوں گی تاکہ دنیا بھر کے عوام کو امریکہ کا ہم خیال بنایا جاسکے۔ اس نئے قانون کو تیار کرنے والی کمیٹی کے ایک رکن نے اپنے حالیہ دورہ یوکرائن کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ مجھے اس حالیہ دورے سے اندازہ ہوا ہے کہ نظریات کی جنگ ابھی بھی بہت اہم ہے اور امریکہ کو اپنی اقدار اور معلومات دنیا تک پہنچانے کیلئے اہم کردار ادا کرنا ہوگا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...