تفضل رضوی کا شعیب اختر پر 10کروڑ ہرجانے کا دعویٰ: میچ فکسنگ کیخلاف کریمنل ایکٹ لایا جائے سابق قومی کرکٹر

تفضل رضوی کا شعیب اختر پر 10کروڑ ہرجانے کا دعویٰ: میچ فکسنگ کیخلاف کریمنل ...

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر)پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے لیگل ایڈوائزر تفضل رضوی نے سابق فاسٹ بولرشعیب اختر پر 10 کروڑ روپے ہرجانے کا دعویٰ کردیا ہے۔پی سی بی کے لیگل ایڈوائزر تفضل رضوی نے کہا کہ شعیب اختر نے سوشل میڈیا کے ذریعے میرے خلاف غلط باتیں کی ہیں اور میں اب سائبر کرائم ایکٹ کے تحت کارروائی کے لییایف آئی اے کو درخواست دے رہا ہوں۔تفضل رضوی کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا کے ذریعے بیرون ملک بھی شعیب اخترکے ریمارکس کو دیکھا اور سنا گیا ہے،میں ان کے خلاف بیرون ملک بھی قانونی کارروائی کروں گا۔دوسری جانب پاکستان بار کونسل نے بھی شعیب اختر کے بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔وائس چیئرمین پاکستان بار کونسل عابد ساقی نے اعلامیہ جاری کر تے ہوئے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے لیگل ایڈوائزر تفضل رضوی بار کے رکن ہیں، ان کے متعلق شعیب اختر کو ایسا بیان نہیں دیا چاہیے تھا۔پاکستان بار کونسل کے اعلامیے میں کہا گیا کہ وکیل اپنے کلائنٹ کی ہدایات کیمطابق کیس کو لے کر چلتا ہے،بار کونسل ایسے مضحکہ خیز بیانات کی اجازت نہیں دے گی۔اعلامیہ میں مزید کہا گیا کہ شعیب اختر محتاط رہیں۔کستان کرکٹ بورڈ کے لیگل ایڈوائزر تفضل رضوی کو نالائقدریں اثناء انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے لیگل ایڈوائزر تفضل رضوی کو نالائق قرار دیدیا۔سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے غیر ملکی میڈیا کو دیے گئے ایک انٹرویو میں پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ میچ فکسنگ میں ملوث کرکٹرز کے خلاف سخت قدم اٹھانے میں ناکام رہا ہے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے میچ فکسنگ کیخلاف قومی اسمبلی سے کریمنل ایکٹ پاس کرانے کا مطالبہ کر دیا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان میں میچ فکسنگ کے کیسز سامنے آنے کے بعد قومی ٹیم کے فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے فکسنگ کیخلاف قومی اسمبلی سے کریمنل ایکٹ پاس کرانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کھیل سے کھلواڑ کرنے والوں کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے بھیجنا چاہئے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ تین سال کی پابندی کا شکار ہونے والے بیٹسمین عمر اکمل پر دباؤ ڈالا جائے گا معافی مانگ لے، سزا کم کردیں گے۔۔اْدھر پاکستان بار کونسل نے بھی شعیب اختر کے بیان پر شدید ردعمل دیا ہے، وائس چیئر مین پاکستان بار کونسل عابد ساقی نے اعلامیہ جاری کرے ہوئے کہا کہ پی سی بی کے لیگل ایڈوائزر تفضل رضوی بار کے رکن ہیں، شعیب اختر کو ایسا بیان نہیں دیا چاہیے تھا، بار کونسل اپنے مضحکہ خیز بیانات کی اجازت نہیں دے گی، شعیب اختر محتاط رہیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستان کرکٹ ٹیم کے کھلاڑیوں کے کرپشن میں ملوث ہونے کے بعد سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر، سابق کپتان رمیض راجہ اور سابق وکٹ کیپر بیٹسمین راشد لطیف نے میچ فکسنگ کو مجرمانہ فعل قرار دیتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس بارے میں جلد از جلد قانون سازی کرے تاکہ کرپٹ کھلاڑیوں کو ملکی قوانین کے تحت سخت سزائیں دی جاسکیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -