بھارت میں صرف مسلمانوں کیلئے ہی رویہ خطرناک نہیں، تمام اقلیتیوں غیر محفوظ: شاہ محمود قریشی

بھارت میں صرف مسلمانوں کیلئے ہی رویہ خطرناک نہیں، تمام اقلیتیوں غیر محفوظ: ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے موجودہ صورتحال میں پالیمنٹ کا اجلاس بلانے کیلئے پارلیمانی رہنماؤں کی تجاویز کا خیر مقد م کرتے ہوئے کہاہے کہ ہمیں سیاسی وابستگیوں سے بالا تر ہو کر سوچنا ہوگا، پارلیمنٹ کے تقدس کو ملحوظ خاطر رکھنا ہو گا، پارلیمنٹ کے اجلاس میں سندھ اور بلوچستان کے ممبران کو شر کت کیلئے دقت ہو سکتی ہے،ان کیلئے متبادل انتظامات بھی ہو سکتے ہیں،ہم پارلیمنٹ کی بالادستی پر یقین رکھتے ہیں اور ہم تمام پارٹیوں کے پارلیمانی رہنماؤں کی طرف سے سامنے آنیوالی مشترکہ تجاویز کو اہمیت دیں گے۔ بدھ کو وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے پارلیمنٹ ہاؤس میں خصوصی کمیٹی ورچول سیشن کے دوسرے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سب سے پہلے میں تمام پارلیمانی رہنماؤں کی تجاویز پر ان کا شکریہ ادا کرنا چاہوں گا،انتہائی اہم تجاویز سامنے آئیں،ہمیں سیاسی وابستگیوں سے بالا تر ہو کر سوچنا ہوگا اور پار لیمنٹ کے تقدس کو ملحوظ خاطر رکھنا ہو گا۔ بلاول بھٹو زرداری نے براہ راست اجلاس بلانے کی اہمیت کیساتھ ساتھ، اراکین پارلیمنٹ کی سیفٹی اور سیکورٹی کو مدنظر رکھنے کی بات کی جو ا نتہائی مناسب بات ہے۔ بلاول بھٹو زرداری نے جو حاضری بمطابق عددی تناسب کی تجویز دی اس پر غور ہونا چاہیے۔ شیخ رشید نے ا چھی تجویز دی کہ پریس گیلری کے علاوہ باقی گیلر یوں کو اجلاس کے دوران بند کر دیا جائے یہ بھی اچھی تجویز ہے۔ کرائسز کے باوجود پوری دنیا میں پارلیمانی بزنس جاری رہتا ہے،پارلیمنٹ کے اجلاس میں سندھ اور بلوچستان کے ممبران کو اجلاس میں شرکت کیلئے دقت ہو سکتی ہے ان کیلئے متبادل انتظامات بھی ہو سکتے ہیں ہم پارلیمنٹ کی بالادستی پر یقین رکھتے ہیں اور ہم تمام پارٹیوں کے پارلیمانی رہنماؤ ں کی طرف سے سامنے آنیوالی مشترکہ تجاویز کو اہمیت دیں گے۔ انکامزید کہا تھا بین الاقوامی ہیومن رائٹس تنظیمیں اور بین الاقوامی میڈیا کی رائے تیزی سے ہندوستان کے حوالے سے بدل رہی ہے، نیویارک ٹائمز، واشنگٹن پوسٹ اور گارڈین سمیت صف اول کے میڈیا نے امریکی کمیشن کی تازہ ترین رپورٹ پر رائے کا اظہار کیا ہے کہ صرف مسلمانوں کیلئے بھارت کا رویہ خطرناک نہیں بلکہ آج ہندوستان کی تمام اقلیتیں غیر محفوظ ہیں، امیت شاہ مسلمانوں کو کرونا کا ذمہ دار قرار دے رہے ہیں بھارت کے مسلمانوں کو کرونا بم سے تشبیہ د ے رہے ہیں جو انتہائی افسوسناک ہے، ایک طرف اقلیتوں کیخلاف بھارتی اقدامات کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور دوسری طرف پاکستان کی اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے کی جا نیو الی کاوشوں کو سراہا جا رہا ہے۔ صرف مسلمانوں کیلئے بھارت کا رویہ خطرناک نہیں بلکہ آج ہندوستان کی تمام اقلیتیں غیر محفوظ ہیں، ایسے 328 مختلف واقعات کا حوالہ دیا گیا ہے جس میں جبرآ تبدیلی مذہب کی کوششیں کی گئی ہیں، ہندوستان میں کروڑوں کی تعداد میں ایسے لوگ بھی ہیں جو مثبت سوچ کے حامی ہیں جو سیکولر ہندوستان کے حامی ہیں وہ آوازیں بھارت سرکار کے رویے کیخلاف اٹھا رہے ہیں، کچھ عرصہ قبل دہلی میں مسلمانوں کا قتل عام ساری دنیا نے دیکھا مگر انہوں نے مصلحتاً خاموشی اختیار کی، خلیجی ممالک نے ہندوستان کے رویے کیخلاف آواز بلند کی ہے، ان ممالک میں بہت سے بھارتی شہری مقیم ہیں مگر ان پر تو زندگیاں تنگ نہیں کی گئیں، او آئی سی کو میں نے دوبارہ خط لکھا ہے میں نے ممبر ممالک کے وزرائے خارجہ کو خطوط ارسال کیے ہیں کہ وہ عالمی سطح پر اس رویے کیخلاف آواز اٹھائیں۔

شاہ محمو د

۱سلام آباد(سٹاف رپورٹر) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر نے ملاقات کی ہے جس میں کوروناوائرس و باء سمیت اہم علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، وزیر خارجہ نے برطانیہ میں ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا، میڈیا رپورٹس کے مطابق بدھ کے روز وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سے پاکستان میں تعینات برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر نے ملاقات کی ہے ملاقات میں کورونا سمیت اہم علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے برطانیہ میں کورونا وائرس کے باعث ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا، شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دکھ کی گھڑی میں برطانوی حکومت اور عوام کیساتھ ہیں،برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر نے برطانوی شہریوں کی وطن واپسی کیلئے سہولیات فراہم کر نے پر پاکستانی حکومت کا شکریہ ادا کیا۔

ملاقات

مزید :

صفحہ اول -