پاکستان میں اقلیتیں مکمل طور پر آزاد ہیں،اعجاز عالم آگسٹین

پاکستان میں اقلیتیں مکمل طور پر آزاد ہیں،اعجاز عالم آگسٹین

  

لاہور (لیڈی رپورٹر)صوبائی وزیر اقلیتی امور و انسانی حقوق اعجاز عالم آگسٹین نے مذہبی آزادی کے حوالے سے امریکی کمیشن کی سالانہ رپورٹ کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہاہے کہ جب سے تحریک انصاف کی حکومت آئی ہے تب سے دنیا بھر میں عمران خان کو امن کا سفیر کہا جا رہا ہے جبکہ پاکستان بھر میں بسنے والی تمام مذہبی اقلیتیں مکمل طور پر آزاد زندگی گزار رہی ہیں اور اپنے تمام تر تہوار وغیرہ منا رہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ بھارت کو پہلی مرتبہ اقلیتوں کیلئے خطرناک ملک قرار دیا جانا ہی پاکستان کے موقف کی تائید ہے کیونکہ بھارت میں متنازعہ بھارتی شہریت بل کے اقدام کو دنیا بھر میں نفرت کی نگاہ سے دیکھا گیا جبکہ امریکی کمیشن نے بھی شدید تنقید کرتے ہوئے اپنی رائے کا اظہار کیا ہے کہ 2019 میں بھارت میں اقلیتوں پر حملوں میں اضافہ ہوا

بلکہ امریکی کمیشن نے بابری مسجد سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے،مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو منسوخ کر نے پر بھی شدید تنقید کی ہے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ دوسری جانب رپورٹ میں پاکستان میں متعدد مثبت پیشرفتوں کا اعتراف بھی کیا گیا ہے،جس میں کرتار پور راہداری کھولنا، پاکستان کا پہلی سکھ یونیورسٹی کھولنا، ہندو مندر کو دوبارہ کھولنا، مذہبی اقلیتوں کے خلاف امتیازی مواد کے ساتھ تعلیمی مواد پر نظر ثانی کے پاکستانی حکومتی اقدامات کی تعریف کی گئی درحقیقت ان سب اقدامات کا کریڈٹ عمران خا ن اور تحریک انصاف کی تمام ٹیم کو جاتا ہے جو کہ پاکستان کو سب کیلئے ایک جیسا بنانے پر زور دے رہی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -