کورونا مریضوں کا علاج کرنے والوں کو حفاظتی کٹس دی جائیں

کورونا مریضوں کا علاج کرنے والوں کو حفاظتی کٹس دی جائیں

  

  

لاہور(جنرل رپورٹر)گرینڈ ہیلتھ الائنس پنجاب نے میو ہسپتال میں پریس کانفرنس کی جس سے خطاب کرتے ہوئے الائنس کے مرکزی چیئرمین ڈاکٹر سلمان حسیب، ینگ فزیشن پنجاب کے سرپرست اعلیٰ ڈاکٹر عاطف مجید چوہدری، پیرا میڈیکل اسٹاف ایسوسی ایشن پنجاب کے چیئرمین ارشد بٹ، سروسز ہسپتال ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین ڈاکٹر محمود الحسن سید اور ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن میو ہسپتال کے صدر ڈاکٹر محمود نے کہا ہے کہ گرینڈ ہیلتھ الائنس حفاظتی کٹس نہ ملنے پر 14 روز سے احتجاج کررہی ہے میو ہسپتال میں کرونا کا علاج کرنے والے ڈاکٹرز کے پاس حفاظتی کٹس نہیں ہیں میوہسپتال میں کرونا سے مرنے والے لوگوں کو دفنانے کیلئے سوٹ نہیں ہیں، ترکی سے جو حفاظتی کٹس آئی وہ کہاں گئی ہیں حکومت 2ماہ سوئی رہی۔میو ہسپتال میں کسی ڈاکٹر اور نرس کا ٹیسٹ نہیں کیا گیاہمارے دس مطالبات تھے ان کو پورا کرنے کا وعدہ کیا گیا تھاالاوئنس صرف کرونا وارڈز میں کام کرنے والے طبی عملے کو دیا جارہا ہے۔ طبی عملے کا ڈیوٹی کے بعد کرونا کا ٹیسٹ نہیں کرایا جارہا ہمیں لائف ٹائم انشورنش نہیں دی جارہی،انہوں نے کہا سی ایم پنجاب ڈمی وزیر اعلی ہیں وزیر صحت سلیکٹیڈ وزیر ہیں اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے مرکزی رہنما ڈاکٹر شعیب نیازی نے کہا ہم اپنا احتجاج ہسپتالوں میں کرنے پر غور کررہے ہیں ڈاکٹر یاسمین راشد کو تین سے چار مرتبہ ٹرمینیٹ کیا گیا تو آپ کیوں پینشن لے رہی ہیں ڈاکٹرز اور نرسز کرونا کا شکار ہورہی ہیں،سندھ حکومت کی طرح پنجاب میں بھی طبی عملے کو سہولیات دی جائیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -