چین میں پہلی آن لائن ایکسپو اور ویڈیو کانفرنس کا انعقاد

  چین میں پہلی آن لائن ایکسپو اور ویڈیو کانفرنس کا انعقاد

  

لاہور(کامرس ڈیسک)پاک چین جوائینٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے پاکستان اور چین کے مابین دو طرفہ صنعتی اور تجارتی تعاون کو بحال کرنے کیلئے چین کے صوبہ شینڈونگ کے کامرس ڈیپارٹمنٹ کے اشتراک سے پہلی آن لائن ایکسپو اور ویڈیو کانفرنس کا انعقاد کیا جس میں کنسٹرکشن انڈسٹری سے متعلقہ چین کی 200 کے لگ بھک کمپنیوں نے نہ صرف مشینری، ٹیکنالوجی اور مصنوعات کی نمائش کی بلکہ وزیر اعظم پاکستان کی طرف سے کنسٹرکشن انڈسٹری کے حوالے سے پیش کردہ مراعات کی روشنی میں کنسٹرکشن انڈسٹری کو فروغ دینے کیلئے پیشکش بھی کی۔

کانفرنس سے پاک چین چیمبر کے صدر زرک خان، سینئرنائب صدر معظم گھرکی اور سیکرٹری جنرل صلاح الدین حنیف نے خطاب کیا۔زرک خان نے کانفر نس کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ کورونا کی عالمی وبا کے پیش نظر اقوام عالم کی معاشی سرگرمیاں تقریباََمنجمد ہو کر رہ گئی ہیں۔ لیکن پاکستان جیسے ترقی پذیر ممالک اس انجماد کو مزید برداشت کرنے کی سکت نہیں رکھتے۔ اس لئے ہم نے چین اور پاکستان کے درمیان صنعتی اور تجارتی سرگرمیوں کے تعطل کو ختم کرنے کیلئے آن لائن رابطے کی راہ اختیار کی ہے۔ اس طرح جسمانی رابطے کے بغیر ڈیجیٹل ابلاغ کے ذریعے چین اور پاکستان کی کاروباری برادری کو مربوط کیا گیا ہے۔ جس کیلئے ہمارے ساتھ چین کے صوبہ شینڈونگ کے محکمہ ءِ تجارت اور 16 کامرس بیوروز نے بھرپور تعاون کیا ہے۔ انہوں نے بتا یاکہ پہلی آن لائن ایکسپو اور ویڈیو کانفرنس میں زیادہ تر کنسٹرکشن میٹریل، مشینری اور ہارڈ ویئر کی کمپنیوں نے شرکت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے سیشنز میں دیگر اہم صنعتی شعبوں کو بھی شامل کیا جائے گا۔پاک چین چیمبر کے سینئرنائب صدر معظم گھرکی نے اپنے خطا ب کے دوران امید کی کہ مذکورہ آن لائن ایکسپو اور ویڈیو کانفرنس چین اور پاکستان کی درمیان صنعتی و تجارتی تعاون کو بحال کرنے میں کلیدی کردار انجام دے گی۔ انہوں نے کانفرنس میں فعال حصہ لینے پر چینی کمپنیوں اور پاکستانی اداروں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاک چین جوائینٹ چیمبر دونوں ممالک کے درمیان کاروباری روابط کے فروغ کی راہ میں کسی وبا ء یا بلا کو آڑے نہیں آنے دے گا۔پاک چین چیمبر کے سیکرٹری جنرل صلاح الدین حنیف نے بتا یا کہ متذکرہ آن لائن ایکسپو اور ویڈیو کانفرنس کے غیرمتوقع مثبت نتائج سامنے آئے ہیں جس کے تحت باہمی کاروباری اشتراک کے متعدد معاہدے تشکیل پائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاک چین چیمبر کی اس کاوش کے تحت مجموعی طو ر پر 200 چینی اور پاکستانی کمپنیوں کو کاروباری اشتراک عمل کا موقع ملا ہے۔

مزید :

کامرس -