موجودہ صورتحال میں وفاقی اورلاہور چیمبر کی قیادت چھپ کر بیٹھی ہے: لاہور بزنسمین فرنٹ

  موجودہ صورتحال میں وفاقی اورلاہور چیمبر کی قیادت چھپ کر بیٹھی ہے: لاہور ...

  

لاہور(کامرس ڈیسک)لاہور بزنسمین فرنٹ کے عہدیداران محمد امجد چودھری، سردار عثمان غنی، راجہ حسن اخترنے لاہور چمبر اور فیڈریشن آف پاکستان چیمبرکی قیادت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ھے کہ کرونا وبا میں کاروباری لاک ڈاؤن کے دوران دونوں اداروں کی قیادت اپنے ذاتی کاروبار تو چلا رہی ہے لیکن عام تاجر اور صنعتکار پر پڑنے والی انتہائی مصیبت پر گھروں میں دبک کر بیٹھی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ چھوٹے درمیانے درجے کہ کاروباروں کو کھلوانے یا ریلیف پیکج دلوانے کیلئے ان دو منتحب اداروں کی لیڈر شپ حکومتی ایوانوں میں جا کر تاجروں کا نہ صرف کیس لڑتی بلکہ انکے لئے امدادی پیکج کا انتظام کروائے بغیر چین سے نہ بیٹھتی، مگر لاہور چمبر اور فیڈریشن آف پاکستان چمبر صرف ظاہری بیان بازی سے آگے نہ بڑہ سکی اور گھروں میں دبک کر بیٹھی ھے۔انکا مزید کہنا تھا کہ وفاقی چمبر کا صدر سارک چمبر کی کرسی کی سیاست کیلئے تو ایڑی چوٹی کا زور لگا رھا ھے، لیکن اسکے پاس تاجروں کیلئے وقت نہیں ھے، دوسری جانب لاھور چمبر کا صدر اپنے زاتی کاروبار کو کھلوانے کیلئے تو اعلی حکومتی ایوانوں سے فوری فیصلہ لے آتے ہیں لیکن ھول سیل مارکیٹوں کو ایس او پی کے مطابق کھلوانے کیلئے انکی زبانی تالہ بندی ھے۔پاکستان اور لاہور چمبر کے تاجر ان نام نہاد منتحب تاجر قیادت کو دیکھ رہی ہے۔

مزید :

کامرس -