میرپورخاص، کورونا وائرس سفید پوش طبقہ کیلئے عذاب بن گیا ہے

میرپورخاص، کورونا وائرس سفید پوش طبقہ کیلئے عذاب بن گیا ہے

  

میرپورخاص(رپورٹ: فہد ملک) کورونا ؤائرس کا خطرہ،سفیدپوش طبقہ کے لیئے عذاب بن گیا ہے،احساس کفالت پروگرام کی سخت شرائط اور سندھ حکومت کا ناکافی ریلیف ان کی عزت کے لیئے سوہان روح بن گیا ہے،تفصیلات کے مطابق کوروناؤائرس سے نپٹنے کے لیئے مسلسل لاک ڈاون کے باعث غریب تو غریب سفید پوش متوسط طبقہ بھی شدید ذہنی دباؤ سے دوچار ہوگئی ہے اور موجودہ کرب ناک حالات میں ان کا باعزت کفالت کرنا نہایت مشکل ہوگیا ہے،میرپورخاص سمیت صوبے بھر میں سندھ حکومت کی جانب سے اربوں روپے مالیت کے راشن کی تقسیم ایک سوالیہ نشان بنی ہوئی ہے،میرپورخاص کی ضلعی انتظامیہ کو سندھ حکومت کی جانب سے تقریبا 3کروڑ67لاکھ روپے امدادی ریلیف کے لیئے جاری کیئے گئے تھے،اور انتظامیہ کی جانب سے راشن بیک تقسیم کرنے کا سلسلہ بھی شروع کیا گیا تھا تاہم شہری اور دیہی حلقوں کی جانب سے راشن کی تقسیم کی شفافیت،مقدار اور معیار کے حوالہ شدید تحفظات کا اظہار کیا جارہا ہے، شہری علاقوں میں رہنے والے بہت سے متوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد نے بتایا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے احساس کفالت پروگرام سے استعفادہ کرنے کے لیئے زمینی حقائق سے منافی شرائط رکھی گئی ہیں،جس کے باعث لاکھوں سفید پوش خاندان اس سے محروم رہیں گے،متوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے سفید پوش افراد عزیز واقارب سے قرضہ لے کر گھر کا خرچہ چلانے پر مجبور ہوگئے ہیں

شیریں مزاری

مزید :

صفحہ آخر -