کرونا وائرس، نشتر میں 18ہلاکتیں، وباء پھیلنے کا خدشہ، انتظامیہ کا نیا امتحان

کرونا وائرس، نشتر میں 18ہلاکتیں، وباء پھیلنے کا خدشہ، انتظامیہ کا نیا امتحان

  

ملتان(نمائندہ خصوصی)نشتر ہسپتال ملتان میں کورونا کے شبہ میں دم توڑنے والے مزید 04 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوگئی،نشتر ہسپتال میں کورونا کے باعث جاں بحق ہونے والوں کی مجموعی تعداد 18 ہو گئی،منگل کے روز دم توڑنے والے 05 افراد میں سے 04 کا تعلق ملتان 01 کا خانیوال سے ہے،ادھر مزید ایک مریض میں کورونا کی تصدیق،زیر علاج کورونا میں مبتلا مریضوں کی تعداد 25 ہو گئی،شبہ میں 20 (بقیہ نمبر40صفحہ7پر)

مریض زیر علاج ہیں نشتر ہسپتال ملتان کے آئی سو لیشن وارڈ میں زیر علاج دہلی گیٹ کے رہائشی 80 سالہ عبدالغفور نے منگل کی شام دم توڑ دیا،جبکہ منگل کو ہی رات گئے آئی سو لیشن وارڈ اور ایمرجنسی میں کورونا کے شبہ میں دم توڑنے والے 04 دیگر افراد میں ملتان کے رہائشی 88 سالہ حنیف 50 سالہ ارشاد،60 سالہ بلال اور خانیوال کے 45 سالہ اسلم میں بھی کورونا کی تصدیق ہو گئی ہے،ادھر نشتر ہسپتال میں یکم اپریل سے 28 اپریل کے درمیان کورونا کے باعث دم توڑنے والوں کی مجموعی تعداد 18 ہو گئی ہے،جبکہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید ایک مریض میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے اس طرح آئی سو لیشن وارڈز میں زیر علاج کورونا میں مبتلا مریضوں کی تعداد 25 ہو گئی ہے جبکہ شبہ میں 24 مریض زیر علاج ہیں۔کورونا وائرس سے بچاو کے پیش نظر چلڈرن کمپلیکس کے ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر عاصم خورشید کی جانب سے انتہائی نگہداشت کے نرسنگ سٹاف کو 100 حفاظتی کٹس،سرجیکل فیس ماسک اور ہینڈ سینی ٹائزرز کا عطیہ دیا گیا،اس حوالے سے ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر عاصم خورشید کا کہنا تھا کہ فرنٹ لائن پر لڑتے ڈاکٹرز نرسز اور پیرا میڈیکل اسٹاف ہمارے ہیرو ہیں اس مشکل گھڑی میں انکے ساتھ کھڑے ہیں۔پنجاب میں کورونا کیسز میں خطرناک حد تک اضافہ،ینگ کنسلٹنٹ ایسوسی ایشن کا ہنگامی اجلاس،تشویش کا اظہار،طبی عملے میں حفاظتی سامان بھی تقسیم کیا گیا تفصیل کے مطابق ینگ کنسلٹنٹ ایسوسی ایشن ملتان کا ہنگامی اجلاس گزشتہ روز نشتر ہسپتال میں ہوا،اجلاس میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز پر تشویش کا اظہار کیا گیا اور پنجاب حکومت سے مطالبہ کیا گیا کے لاک ڈاؤن کو 31 مئی 2020 تک لاگو رہنا چاہیے ورنہ کورونا کے کیسز میں تیزی سے بڑھنے کا شدید اندیشہ ہے،نشتر انتظامیہ سے بھی مطالبہ کیا گیا کہ تمام ہیلتھ ورکرز کو حفاظتی لباس،n95 ماسک اور گلوز فراہم کئے جائیں،اس کے علاوہ پنجاب حکومت سے مطالبہ کیا کہ ٹی ایچ کیو، ڈی ایچ کیو اور بی ایچ یو ہسپتالوں میں حفاظتی سامان کی شدید قلت ہے اور فوری طور پر وہاں حفاظتی سامان کو پہنچایا جائے،اجلاس کے بعد نشتر ہسپتال میں 150 حفاظتی لباس،سرجیکل ماسک اور گلوز تقسیم کئے گئے،اجلاس میں چیئرمین ڈاکٹر زاہد سرفراز،صدر ڈاکٹر محمد علی وقاص،پیٹرن اِن چیف ڈاکٹر زاہد شاہ بخاری،سینئر وائس پریزیڈنٹ ڈاکٹر ارشاد کاشف،لیڈی وائس پریذیڈنٹ ڈاکٹر راشدہ عارف،جنرل سیکرٹری ڈاکٹر نصرت بزدار،سینئر وائس پریزیڈنٹ ڈاکٹر ہاشر مجتبیٰ،ڈاکٹر مطیع اللہ ماجد،ڈاکٹر محمد علی بلوچ،ڈاکٹر رضوان شریف اور ڈاکٹر عامر اعظم نے شرکت کی۔

ہلاکتیں

مزید :

ملتان صفحہ آخر -