محنت کش کی خود کشی، وزیر اعلی کانوٹس،3لاکھ کاچیک بیوہ کے حوالے

  محنت کش کی خود کشی، وزیر اعلی کانوٹس،3لاکھ کاچیک بیوہ کے حوالے

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)گھر میں فاقے اور بچیوں کو پانی سے روزہ رکھتے دیکھ زہریلی گولیاں کھا کر خود کشی کرنے والے بے روز گار نوجوان کی وفات پروزیراعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار نے نوٹس لے لیا،وفاقی وزیر مملکت ڈاکٹر میاں شبیرعلی کی کوشش سے(بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

پنجاب حکومت کی جانب سے مالی امداد کا چیک جاری ہوگیا ،3روز بعدوفاقی وزیر مملکت برائے ہاؤسنگ اینڈ ورکس ڈاکٹر میاں شبیر علی قریشی کی بیوہ کے گھر آمد اورحکومت پنجاب کی جانب سے تین لاکھ روپے کا چیک دیا بیوہ کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں نوکری دینے کا بھی اعلان کیا،سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی نے بھی واقعہ کا نوٹس لے لیا، مالی امداد کے لیے بیوہ سے تفصیلات طلب کرلیں۔ تفصیل کے مطابق کوٹ ادو وارڈ نمبر14محلہ بیری والا کے رہائشی اللہ ڈیوایا چانڈیہ مرحوم کا بیٹا 45سالہ نذیر حسین چانڈیہ جو کہ پرائیویٹ لیب ٹیکنیشن تھا اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے کئی روز سے بے روز گار تھا، غربت اور بیروزگاری اور حکومت کی جانب سے راشن اور امداد کی رقم 12ہزار نہ ملنے کے باعث بچوں کا پیٹ پالنے کے لیے پریشان تھا اور بچیوں کو بھوک اور پانی سے روزہ رکھتے دیکھ کر نذیرحسین نے گزشتہ سے پیوستہ روزگندم میں رکھنے والی گولیاں کھاکر زندگی کا خاتمہ کرلیاتھا، خودکشی کرنے والے نذیر حسین کی بچیوں کے مطابق گھر بھی کرایہ کا تھا ابو سے ہماری بھوک برداشت نہ ہوئی تھی اور گھر کھانے کو کچھ نہیں تھا ابو لاک ڈاؤن کی وجہ سے پریشان تھے جسکی وجہ سے گولیاں کھالیں،نذیر حسین جو کہ کرایہ کے مکان میں رہائش پذیر تھا اور ایک سال پہلے اپنا مکان فروخت کرکے اپنی 2بیٹیوں کی شادی کر دی تھی جبکہ 3بیٹیاں ابھی کنواری تھیں اور ایک چھوٹا بیٹا حیات ہیں،غربت،بیروزگاری اور حکومت کی جانب سے راشن اور امداد کی رقم 12ہزار نہ ملنے اورگھر میں فاقوں کی وجہ سے خودکشی کرنے والے نذیر حسین کا میڈیا پر خبر نشر ہونے کا وزیراعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار نے نوٹس لیا تھا جبکہ وفاقی وزیر مملکت برائے حوصل اینڈ ورکس ڈاکٹر میاں شبیر علی قریشی نے بھی پنجاب حکومت سے بیوہ کیلئے مالی امدادکا مطالبہ کیا تھا جس پر پنجاب حکومت نے بیوہ کے لیے تین لاکھ روپے کا چیک جاری کیا تھا،گزشتہ روز وفاقی وزیر مملکت برائے ہاؤسنگ اینڈ ورکس ڈاکٹر میاں شبیر علی قریشی اسسٹنٹ کمشنر کوٹ ادو کے ہمراہ محلہ بیری والامیں خودکشی کرنے والے نذیرحسین مرحوم کے گھر آئے اور مرحوم کی بیوہ کو حکومت پنجاب کی جانب سے تین لاکھ روپے کا امدادی چیک دیا اور بیوہ کو تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال کوٹ ادو میں نوکری دینے کا بھی اعلان کیا، اس موقع پر انہوں نے وزیراعظم عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار کی جانب سے واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے بیوہ سے تعزیت اور مرحوم کے لیے دعائے مغفرت بھی کی،وزیر مملکت میاں شبیر علی قریشی نے اس موقع پرکہا کہ اس افسوسناک سانحہ پر فوری وزیراعلیٰ پنجاب سے متاثرہ فیملی کیلئے امداد کی اپیل کی تھی۔ جس کے لیے پنجاب حکومت نے بیوہ کیلئے 3 لاکھ روپے کا چیک دیا ہے جبکہ بیوہ کو نوکری دینے کیلئے دستاویزات لے لیے جلد نوکری بھی فراہم کردی جائے گی،دریں ا ثناء اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی نے بھی اس واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے بیوہ کے لیے مالی امداد کا اعلان کیا ہے جس کے لیے ان کے نمائندوں نے گزشتہ روز بیوہ سے ملاقات کی اور ضروری کاغذات بھی وصول کئے جبکہ ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ انجینئر امجد شعیب خان ترین کی جانب سے بھی مرحوم کی بیوہ اور ان کے بچوں کی تفصیل بھی طلب کرلی گئی ہے اور ان کے ب فارم بھی منگوائے گئے ہیں

مزید :

ملتان صفحہ آخر -