بیوی کا قتل، ملزم گرفتار، بداخلاقی اور ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل کرنیوالا اوباش زیرحراست

بیوی کا قتل، ملزم گرفتار، بداخلاقی اور ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل کرنیوالا ...

  

جام پور(نمائندہ خصوصی)ماڈل تھانہ صدر پولیس نے تعلقات کے شبہ میں آٹھ ماہ کی حاملہ بیوی کو قتل کرنیوالے سفاک ملزم سمیت امام مسجد کی بیٹی سے گن پوائنٹ پربد اخلاقی(بقیہ نمبر44صفحہ6پر)

کرنے، تصاویر بنا کر سوشل میڈیا پر وائرل کرنیوالے اوباش اور رشتہ سے انکار پر لڑکی کو اغواء کرنے والے ملزم کو شاہ صدر دین میں "لادی گینگ" کے علاقہ سے گرفتار کرکے مغویہ بازیاب کرلی، سب انسپکٹر و ایس ایچ او تھانہ صدر جام پور سردار زبیر خان بزدار نے اپنے دفتر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ موضع محل مکول کے رہائشی عبدالقیوم چانڈیہ نے ناجائز تعلقات کے شبہہ میں اپنی جواں سالہ بیوی ثمینہ بی بی کو اسی کے دوپٹے کا پھندہ بنا کر گلے میں ڈال کر موت کے گھاٹ اتار دیا تھا اور بعد از مرگ متوفیہ کی نعش چھت کے گارڈر کے ساتھ لٹکا کر خود کشی کا ڈرامہ رچانے کی کوشش کی تھی تاہم متوفیہ کے والد عبدالرحیم کی مدعیت میں پولیس نے ملزم کیخلا نامزد مقدمہ نمبر146/20درج کرکے ملزم کو گرفتار کرلیا اور تفتیش کے ابتدا میں ہی ملزم نے اعتراف جرم کرلیا، ایس ایچ او نے بتایا کہ موضع طلائی والا کے رہائشی عرفان ولد غلام شبیر کنڈیرا نے بلال کے ساتھ مل کر علاقہ کے امام مسجد عاشق حسین تھہیم کی 16 سالہ بیٹی بشری مائی کے ساتھ گن پوائنٹ پر بداخلاقی کی اور تصویریں بنا کر سوشل میڈیا پر ڈال دیں۔ متاثرہ دوشیزہ بشری بی بی کے والد کی مدعیت میں تھانہ صدر پولیس نے مقدمہ نمبر151/20درج کرکے ملزمان کو بروقت کارروائی میں گرفتار کرلیا۔ اسی طرح دوماہ قبل موضع کوٹ جانوں کے رہائشیوں مسمیان اظہر دین قریشی نے اپنے والد کے ہمراہ پسند کی شادی کرنیوالی اپنی بہن کی نند عظمی بی بی دختر نبی بخش قریشی کو انڈس ہائی وے سے اغوا کرکے شاہ صدر دین میں جرائم پیشہ افراد کے خطرناک "لادی گینگ"کے علاقہ میں رکھا ہوا تھا۔ ملزمان کی گرفتاری اور مغویہ کی بحفاظت بازیابی کو یقینی بنانے کی غرض سے ڈی ایس پی چوہدری فیاض الحسن کی ہدائت پر پولیس کی ریڈنگ پارٹی تشکیل دی گئی تھی جس نے گزشتہ سے پیوستہ روز جدید ٹیکنا لوجی استعمال کرتے ہوئے ڈرامائی انداز میں ریڈ کرکے ملزم عرفان کو گرفتار کرکے مغویہ کو بحفاظت بازیاب کرلیا۔انہوں نے بتایا کہ ملزم عرفان نے مغویہ کے والدین سے رشتہ بھی مانگا تھا لیکن لڑکی کے والدین کے انکار کے بعد لڑکی کو گن پوائنٹ پر اغوا کرلیا تھا۔ ایس ایچ او سردار زبیر خان بزدار نے بتایا کہ میری ساڑھے تین ماہ کی تعیناتی کے دوران ہونیوالی چوری ڈکیتی، رہزنی اور قتل وغیرہ کی کسی بھی واردات کے مقدمہ تفتیش التوا میں نہیں ہے۔ درج تمام مقدمات حقائق پر یکسو کرکے نمٹا دیئے گئے ہیں اور ملزمان سے ریکوریاں کرکے متاثرین کے حوالے کر دی گئی ہیں۔اس موقع پر انہوں نے سب انسپکٹرز ارشاد خان بٹوانی، شریف خان ہرگن، اسسٹنٹ سب انسپکٹراز شکور خان، انچارج سکیورٹی ضمیر خان لاشاری، محرر زاہد خان احمدانی، مبشر احمد کی کارکردگی کی بھی تعریف کی۔

زیرحراست

مزید :

ملتان صفحہ آخر -