مردان، میر افضل خان بازار میں لاک ڈاؤن کیخلاف ورزی پر جھگڑا

مردان، میر افضل خان بازار میں لاک ڈاؤن کیخلاف ورزی پر جھگڑا

  

مردان(بیورورپورٹ) میرا فضل خان بازار میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر خاتون اسٹنٹ کمشنر اور مقامی دکانداروں کے درمیان پھڈا، تاجر نے قمیص پھاڑ کر اسسٹنٹ کمشنر کی گاڑی کے آگے لیٹ گیا،حالات کو قابو کرنے کے لئے مزید پولیس نفری طلب کرلی گئی تین تاجر گرفتار،مرکزی ملزم کو تین ماہ کے لئے جیل بیجھ دیاگیا تفصیلات کے مطابق اسسٹنٹ کمشنر مس گل بانو روٹین کی چیکنگ پر بازار میرافضل خان میں کے دورے پر تھیں کہ اس دوران سنی صراف نامی زرگری کی دکان کھلی تھی جس پر اے سی نے دکان سے ایک شخص کو گرفتارکرلیا جس پر دکاندارسنی صراف آپے سے باہر ہوگیا اور نعرہ بازی کرتے ہوئے اپنی قمیص پھاڑی دی اور اے سی کی گاڑی کے سامنے لیٹ گیا اے سی مردان نے اس حوالے سے پولیس کو ایک تحریری مراسلہ ارسال کرکے سنی صراف،سبحا ن اللہ اورعالمگیر کے خلاف پی ڈی ایم اے اور این ڈی ایم اے کے تحت مقدمات درج کرنے کی ہدایات دیں پولیس نے مقدمہ کے اندراج کے بعد تینوں تاجروں کو گرفتارکرلیا بعدازاں مبینہ ملزمان کو خاتون آفیسر جنہیں مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات حاصل ہیں کو پیش کیاگیا مجسٹریٹ نے سنی صراف کو تین ماہ جبکہ باقی دونوں ملزمان کو ایک ایک ماہ قید کی سزا کا حکم سناکر جیل بیجھ دیایادرہے کہ اس سے قبل بھی بازار شہیدان میں تاجر رہنماؤں نے مذکورہ اسسٹنٹ کمشنر کے ساتھ مبینہ بدتمیزی کی تھی جس پر کئی رہنماؤں کو گرفتار کیاگیاتھا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -