شانگلہ میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر45 افراد گرفتار

شانگلہ میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر45 افراد گرفتار

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)شانگلہ میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر45 افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے، کاروائی گزشتہ چار دنوں کے دوران ضلع بھر کے مرکزی بازار،بشام بازار، کروڑہ بازار، شاہ پور بازار،ڈہرئی بازار، بیلے بابا بازار،الپوری بازار اورالوچ بازارکے علاوہ دیگر مختلف علاقوں اور مضافات کے دیہاتوں میں عمل میں لائی گئی۔ زیر حراست افراد میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والے دکانداران شامل ہیں جنکے خلاف مقدمات بھی درج کر لئے گئے ہیں کورونا وائرس کی روک تھام کے پیش نظر خیبر پختونخوا کے تمام اضلاع میں جاری لاک ڈاؤن میں توسیع کیساتھ ساتھ ہر قسم کی کاروباری سرگرمیاں شام چار بجے تک بند کرنے کا اعلان کیا گیا جس کے لئے تمام بازاروں،مارکیٹیں اور دیگر تجارتی مراکز سمیت بین الاضلاعی ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے تا ہم میڈیکل سٹور اور ہتھ ریڑھی چلانے والے افراد کو اپنی سرگرمیاں جاری رکھنے کی اجازت دی گئی اس سلسلے میں حکومتی احکامات پر سختی سے عملدرآمد یقینی بناتے ہوئے پولیس شہریوں کو گھروں تک محدود کرنے کی مہم جاری رکھے ہوئے ہے اور ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شانگلہ ملک اعجاز کی خصوصی ہدایت کی روشنی میں شہر اور دیہی علاقوں میں پولیس گشت بھی بڑھا دیا گیا ہے اور لوگوں میں کورونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں حفاظتی تدابیر اپنانے کی اگاہی مہم چلائی جا رہی ہے پولیس نے لاک ڈاؤن کی پابندی پر عملدرآمد نہ کرنے کی شکایت پر درجنوں دکانداروں کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے مقدمات درج کر لئے ہیں علاوہ ازیں رمضان المبارک میں عوام کی سہولت اور انسداد کورونا اقدامات کے پیش نظر کریانہ کی دکانیں اور اشیائے ضروریات کی دیگر دکانیں شام چار بجے تک کھلی رکھی جاتی ہیں تاکہ لوگوں کو اپنی ضروریات زندگی پوری کرنے میں کوئی مشکلات بھی پیش نہ آئے اور بازاروں میں رش اور ہجوم پر بھی موثر کنٹرول ہو اور کورونا وائرس تدارک ممکن بنایا جاسکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -