عرب ملک نے زراعت کی دنیا میں تہلکہ برپا کردیا، سبزیاں اگانے کا ایسا طریقہ دریافت کرلیا جو ہم نے کبھی سوچابھی نہ تھا

عرب ملک نے زراعت کی دنیا میں تہلکہ برپا کردیا، سبزیاں اگانے کا ایسا طریقہ ...
عرب ملک نے زراعت کی دنیا میں تہلکہ برپا کردیا، سبزیاں اگانے کا ایسا طریقہ دریافت کرلیا جو ہم نے کبھی سوچابھی نہ تھا

  


دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک) گلف ریاست قطرایک صحرائی ریاست ہے جس کے پاس قابل کاشت زمین نہ ہونے کے برابر ہے لیکن اب قطر حکومت نے جدید ترین ٹیکنالوجی کے ذریعے زرعی زمین کی کمی پر قابو پانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ حکومت نے زمین کے بغیر سبزیاں اگانے کا منصوبہ بنایا جس کے تحت 2023ء تک قطر اپنے استعمال کی 70فیصد سبزیاں خود پیدا کرے گا۔ اس کے لیے قطر کی ایک کمپنی حسّاد فوڈز گزشتہ دو سال سے زمین  یا مٹی  کے بغیر سبزیاں اگانے کا کامیاب تجربہ کر رہی ہے۔ قطر کے ایک صحرائی ریاست ہونے کی وجہ سے اسے پانی کی کمی کا بھی سامنا ہے لہٰذا اس ٹیکنالوجی کے تحت یہ سبزیاں زرعی پانی کو ری سائیکل کرکے اگائی جائیں گی جس سے زرعی پانی کی بھی بہت زیادہ بچت ہو گی۔

حسّاد کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دو سال کے تجربات کے بعد ہم اس نتیجے پر پہنچنے ہیں کہ اس طرح سبزیاں پیدا کرکے ملک کی ضرورت کی70فیصد سبزیاں ہم خود پیدا کر سکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ فی الحال ہم ملکی ضرورت کی 11سے 16فیصد تک سبزیاں خود اگا رہے ہیں جبکہ باقی درآمد کرنی پڑتی ہیں۔ ہمارے فارمز پر کامیاب تجربات کے بعد ہم وثوق سے حکومت کو کہہ سکتے ہیں کہ وہ اس کام میں توسیع لائے جس کے بعد ہم 8سالوں میں 70فیصد سبزیاں خود اگا رہے ہوں گے۔سبزیاں اگانے کے لیے یہ ٹیکنالوجی قطر کے موسم سے مطابقت رکھتی ہے اور پیداوار اور معیار کے حوالے سے بھی ہماری توقعات پر پوری اتری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...