5 دن تک جنگل میں کھو جانے والی 2 خواتین کیا کھا اور پی کر زندہ رہیں؟ انتہائی متاثرکن کہانی

5 دن تک جنگل میں کھو جانے والی 2 خواتین کیا کھا اور پی کر زندہ رہیں؟ انتہائی ...
5 دن تک جنگل میں کھو جانے والی 2 خواتین کیا کھا اور پی کر زندہ رہیں؟ انتہائی متاثرکن کہانی

  


نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) اگر آپ کسی جنگل میں کھو جائیں ، کئی دن تک آپ کو باہرنکلنے کا راستہ نہ ملے اور اس پر مستزاد یہ کہ آپ کے کھانے کے لیے کوئی چیز ہو نہ پینے کے لیے پانی، تو آپ کیا کریں گے۔ بالکل ایسی ہی حالت میں امریکی ریاست کیلیفورنیا کے جنگلات میں 2خواتین 5دن تک کھوئی رہیں۔ 57سالہ لورا شرمین اور 56سالہ ڈنیزے ڈیاز جنگل میں واقع ایک جھیل تک پہنچنے کی کوشش کر رہی تھیں، جس راستے پر وہ جار ہی تھیں اس سے بخوبی واقف تھیں لیکن وہ راستہ بند ہونے کی وجہ سے انہیں متبادل راستے پر جانا پڑا جس سے وہ بالکل واقف نہ تھیں جس کے نتیجے میں وہ جنگل میں کھو گئیں۔

انہوں نے جنگل میں انتہائی کٹھن دن گزارے، ان کے پاس کھانے کی بھی چند ہی چیزیں تھیں اور پانی کی صرف 2بوتلیں تھیں۔ کھانے پینے کی یہ اشیاءتو چند گھنٹوں میں ہی ختم ہو گئیں۔بھوکے پیاسے مسلسل چلنے کی وجہ سے ان کی حالت غیر ہو گئی اور اس سے قبل کہ وہ موت کے منہ میں چلی جاتیں، انہوں نے پیاس بجھانے کے لیے اپنا پیشاب پینا شروع کر دیا اور گھاس چبا کر اس کا پانی چوسنے لگیں۔ اسی حالت میں انہوں نے 5دن گزارے۔ پانچویں روز دو افراد اپنے جانوروں کا ریوڑ لیے ادھر سے گزرے ، انہوں نے ان دونوں کی حالت زار دیکھ کر انتظامیہ کو اطلاع دی اور انتظامیہ کے اہلکار ہیلی کاپٹر پر دونوں کو جنگل سے نکال کر لے گئے۔ ڈیاز کا کہنا تھا کہ لورا بہت گھبرا گئی تھی، وہ بالکل مایوس ہو چکی تھی لیکن میں نے اسے کہا کہ ”ابھی تو ہمیں دادی اور نانی بننا ہے، ابھی ہمارے پوتے اور نواسے ہوں گے، ہم ابھی نہیں مریں گی، ہماری ابھی مرنے کی عمر نہیں ہوئی۔اس کے بعد لورا کی بھی امید بندھی اور آج بالآخر ہم محفوظ مقام پر پہنچ چکی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...